ہندوستان

دہلی اقلیتی کمیشن کی اہم خبریں

نئی دہلی :10/فروری(بی این ایس)
دو بہنوں کے قتل کے سلسلے میں گرفتاری اور کیس کا اندراج
نئی دہلی: پچھلی ستمبر میں چوہان بانگر کی رخسار بیگم (۲۲ سال) اور نبیلہ (۱۹ سال)کی لاشیںایک نالے میں ملی تھیں ۔ دہلی اقلیتی کمیشن نے اس خبر کا از خود نوٹس لیتے ہوئے ڈی سی پی شمال مشرق دہلی کو نوٹس جاری کیا تھا۔ جواب میں ڈی سی پی نے اطلاع دی ہے کہ اس سلسلے میں لیفٹی عرف گلشن عرف لکی ولد گوپال داس اور شیوم بھاردواج ولد دھرویر کو گرفتار کرکے ان کے خلاف ایف آئی آر اور کیس درج کرلئے گئے ہیں۔

بوراری علاقے میں ضعیف عورتوں کا شیلٹر
نئی دہلی: بوراری علاقے میں شانتی بھون نامی بوڑھی اور ضعیف عورتوں کے شیلٹر کے کچھ حصے کو شمالی دہلی میونسپل کارپوریشن کے بلڈنگ ڈپارٹمنٹ نے بغیر کسی نوٹس کے ۲ اگست ۲۰۱۸ کو توڑ دیا تھا اور موقع پر موجود نہ صرف بے سہارا عورتوں بلکہ ان کے بلانے پر آنے والی دہلی اقلیتی کمیشن کی ممبر محترمہ انستاسیہ گل کے ساتھ بھی بدتمیزی کی تھی۔ اس سلسلے میں ایم سی ڈی کے بوراری سرکل کے ذمہ دار ان نے کیس کی سماعت کے دوران کمیشن سے آکر معافی مانگی اور مستقبل میں مذکورہ شیلٹر کو نقصان نہ پہنچانے کا وعدہ کیا ۔ یہ شیلٹر قدیم ہی نہیں بلکہ لال ڈورا علاقے میں واقع ہے اور اس میں پولیس والے بھی بے سہارا عورتوں کو داخل کرتے رہتے ہیں ۔ اس معافی کو کافی نہ جانتے ہوئے کمیشن نے اس افسر کو بھی طلب کیا جو موقع پر موجود تھا اور جس کے حکم پر شیلٹر میں توڑ پھوڑ کی گئی تھی۔ مذکورہ افسر نے بھی کمیشن میںآکر تحریری طور پر معافی مانگی۔ اس کو قبول کرتے ہوئے کمیشن نے مذکورہ شکایت کی فائل بند کردی۔

نیو مصطفی آباد ڈسپنسری کے خلاف شکایت
نئی دہلی: نیو مصطفی آباد کے باشندوں نے دہلی اقلیتی کمیشن میں شکایت درج کرائی ہے کہ گلی نمبر ۴ میں واقع سرکاری ڈسپنسری میں مریضوں کے ساتھ بدسلوکی ہوتی ہے۔ ڈسپنسری میں مقرر خاتون ڈاکٹر مریضوں کے ساتھ بدتمیزی سے پیش آتی ہے، دیر سے آتی ہے ، جلدی چلی جاتی ہے، مریضوں کو دوائیں نہیں دیتی ہے اور شکایت کرنے پر مریضوں کو دھمکاتی ہے۔ اس سلسلے میں کمیشن نے محکمہ صحت دہلی حکومت کو نوٹس دے کر معاملے کی تحقیقات کرنے اور ۲۲ فروری تک رپورٹ داخل کرنے کی ہدایت دی ہے۔

ابوالفضل انکلیو میں سڑکوں پر قبضے کے خلاف شکایت
نئی دہلی: جنوبی دہلی میں واقع ابوالفضل انکلیو کے ایک شہری نے دہلی اقلیتی کمیشن میں شکایت درج کرائی ہے کہ علاقے میں دکان داروں، ہوٹل والوں اور لوہاروں وغیرہ نے سڑکوں پر قبضہ کرلیا ہے جس کی وجہ سے لوگوں کو چلنا پھرنا مشکل ہوگیا ہے۔ کمیشن نے اس سلسلہ میں ڈی سی پی ضلع جنوب مشرق اور کمشنر جنوبی دہلی میونسپل کارپوریشن کو نوٹس بھیج کر معاملے کی تحقیقات کرنے اور سڑکوں پر قبضوں کو خالی کرنے کی ہدایت دی ہے۔

حضرت نظام الدین میں منشیات کا کاروبار
نئی ہلی: حضرت نظام الدین کے ایک باشندے نے دہلی اقلیتی کمیشن میں شکایت درج کی ہے کہ علاقے میں منشیات کی فروخت اور استعمال زوروں پر ہے جس کی وجہ سے علاقے میں جرائم بھی بڑھ گئے ہیں۔ شکایت میں ایک خاتون کو نامزد کیا گیا ہے جو علاقے کے ایم سی ڈی پارک میں کھلے عام منشیات کا کاروبار کرتی ہے۔ کمیشن نے جنوبی مشرقی دہلی کے ڈی سی پی کو نوٹس دیکر اس معاملے کی انکوائری کرنے اور اس کی روک تھام کے لیے کیے جانے جانے والے اقدامات کی رپورٹ طلب کی ہے۔

گوشت کے تاجر کو پریشانی
نئی دہلی: دہلی میٹ مرچنٹس ایسوسی ایشن نے دہلی اقلیتی کمیشن میں شکایت درج کرائی کہ بدھ وہار ، منیرکا گائوں میں واقع چراغ الدین ولد معراج الدین کی گوشت کی دکان کو سائوتھ ایم سی ڈی نے ڈیڑھ سال سے بند کررکھا ہے اور مطلوبہ تبدیلیوں اور اصلاحات کے کرانے کے باوجود ان کو لائسنس نہیں دیا جا رہا ہے جس کی وجہ سے وہ شخص بربادی کے دہانے پر ہے۔ کمیشن کے نوٹس پر سائوتھ ایم سی ڈی کے ڈپٹی ڈائرکٹر (وی ایس) نے کمیشن کو اطلاع دی ہے مذکورہ تاجر سے ایک حلف نامہ لیکر مسئلہ حل کردیا گیا ہے اور جلد ہی ان کو لائسنس مل جائے گا۔

ہوٹل کے مالک کے قتل کے سلسلے میں کارروائی
نئی دہلی: پچھلے سال۱۹ ؍مئی کو گاندھی نگر کے علاقے میں واقع ایک ہوٹل کے مالک شہاب الدین کا قتل ہوگیا تھا۔ اس سلسلے میں دہلی اقلیتی کمیشن نے ازخود نوٹس لیتے ہوئے شاہدرہ کے ڈی سی پی سے رپورٹ طلب کی تھی۔ مذکورہ ڈی سی پی نے کمیشن کو اطلاع دی ہے کہ قتل کے دن ہی گاندھی نگر پولیس اسٹیشن میں ایک ایف آئی آر درج ہوگئی تھی۔ اس وقت قتل کے ملزموں میں سے ایک شخص موہیت کو گرفتار کرلیا گیا تھا اور اب تحقیقات کے بعد باقی ملزمین ابھجیت چودھری، آنند اور سنیل کو بھی گرفتار کرلیا گیا ہے۔ اس سلسلے میں چارج شیٹ فائل ہوگئی ہے اور عدالتی کارروائی جاری ہے۔

اسکول کے خلاف کارروائی
نئی دہلی: دریا گنج علاقے کے شریمتی درگا بائی سینئر سیکنڈری اسکول نے ایک عرصے سے اپنے دسویں کلاس کے ایک طالب علم کو اسکول آنے سے منع کررکھا ہے حالانکہ یہ طالب علم اس اسکول میں درجہ کے جی سے طالب علم ہے۔ کمیشن کے نوٹس پر مذکورہ اسکول کے ذمہ داران تسلی بخش جواب نہیں دے سکے جس کے بعد کمیشن نے آرڈر جاری کیا کہ مذکورہ طالب علم سے معافی نامہ لیکر اسے اسکول آنے دیا جائے اور اس کا مستقبل نہ خراب کیا جائے۔ اسکول نے اس آرڈر کو ماننے سے انکار کردیا، جس کے بعد کمیشن نے محکمہ تعلیمات کو اس اسکول کے خلاف کارروائی کرنے کی ہدایت دی ہے۔

وفات کا سر ٹیفکیٹ جاری
نئی دہلی: دہلی اقلیتی کمیشن میں سبھاش وہار ، گھونڈا، کی ایک خاتون نے شکایت درج کی ہے کہ کئی ماہ سے دوڑنے کے باجود مشرقی دہلی میونسپل کارپوریشن اس کے خاوند کی وفات کا سر ٹیفکیٹ نہیں جاری کررہا ہے جس کی وجہ سے اس کو دوسرے معاملات نپٹانے میں پریشانی ہورہی ہے۔ کمیشن کے نوٹس پر میونسپل کارپوریشن نے فوری طور سے مذکورہ خاتون کو بلاکر کارروائی مکمل کی اور شوہر کی وفات سر ٹیفکیٹ اس کے حوالے کردیا ہے۔
(ختم)

Tags

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker