ہندوستان

حضرت امیرشریعت کاتعلیمی دورہ

مدھوبنی :10/فروری (بی این ایس)
امیر شریعت سید محمد ولی رحمانی آج ضلع کے بسفی بلاک حلقہ کے مختلف گائوں کے مدارس و مکاتب کا دورہ کیا۔ جہاں انہوں کھیری بانکا میں مجلس شوریٰ کے رکن و ہیرو ایجنسی کے مالک الحاج تقی حیدر جیلانی کی دعوت پردعائیہ تقریب میں شامل ہونے کے لئے جیلانی ہیرو ایجنسی کے احاطہ میں تشریف لائے۔ جہاںعارف جیلانی عرف امبر بابو نے پھولوں کے گلدستہ سے انکا استقبال کیا ۔وہیں اسکے بعد امیر شریعت نے امت مسلمہ اوربانکا گائوں کی خوشحالی کے لئے دعا کی۔وہیں اسکے بعد اسراہی گائوں کے مدرسہ روضۃالعلوم کے نئی تعمیر شدہ عمارت کا افتتاح کیا۔اس دوران انہوں یہاں موجود لوگوں کو خطاب کر تے ہوئے کہا کہ آپ لوگ آپس میں اتحاد پیدا کریں۔کیونکہ اتحاد اور بھائی چارہ سے ترقی ہوتی ہے۔وہیں انہوں نے کہا اتحاد کے لئے ہر مسلمان کو اللہ سے دعا کرنی چاہئے اور اتحاد قائم کرنے کی ہر ممکن کو شش کرنی چاہئے۔اس دوران انہوں اسراہی گائوں کی خوشحالی اور مدرسہ کی ترقی کے لئے دعا کی۔وہیں اس دوران حلقہ کے درجنوں کی تعداد میں لوگ امیر شریعت سید محمد ولی رحمانی کے ہاتھوں سے بیت ہوئے۔وہیں اسکے بعد امیر شریعت حلقہ کے جامعہ اسلامیہ مدنی نگر پتونامیں تشریف لائے اور یہاں بھی انہوں نے گائوں کی خوشحالی اور مدرسہ کی ترقی کے لئے دعا کی۔اس موقع پرمولانا شبلی القاسمی،مفتی اعجاز قاسمی، آصف جیلانی،،محمد محی الدین،محمد سیف اللہ،ظہیر پر سونوی،محمد امتیاز پر سونی،محمد شکیل،محمد چاند عشمانی،مولانا فہیم قاسمی،مولانا اسلم،،سمیت ہزاروں کی تعداد میں لوگ موجود تھے۔وہیں جمعہ کی شب امیرشریعت و مسلم پرنسل لاء بورڈ کے جنرل سکریٹری مولانامحمد ولی رحمانی یک روزہ سترہواں عظیم الشان اجلاس تحفظ شریعت ودستار بندی مدرسہ رحمانیہ یکہتہ میں مدرسہ کے حفاظ کرام کے سر پردستار باندھنے کے بعدعوام الناس کو خطاب کر تے ہوئے کہا کہ قرآن کی تعلیمات کو عام کریں۔انہوں نے صاف طور پر کہا کہ دنیا کی ساری نظام بدل سکتی ہے مگر اللہ کا نزول کردہ قرآن شریف کی ایک آیت نہیں بدل سکتا ہے۔ وہیںدارالعلوم وقف دیوبند کے استاد حضرت مولانا شمشاد رحمانی قاسمی نے خطاب کرتے ہو ئے کہا کہ آج امت کو اتحاد واتفاق کی ضرورت ہے تاکہ ایک امت ایک جماعت بن کر رہیں اسی میں مضبوطی اور قوت ہے اختلاف وانتشار اور آپسی جھگڑے کو کم کرنے کی ضرورت ہے نیز بچوں کو تعلیم سے آراستہ کریں اور اعلی سے اعلی تعلیم دلائیں مگر دینی ماحول میں ہو۔انہوں نے کہا کہ مدارس امت کے لئے محسن ہیں ، ہمارے ایمانی اور ستائر کی کی حفاظت کی ہے اگر یہ مدارس نہ ہو تے تو آج اس ملک میں ہمارے ایمان محفو ظ نہ ہوتے ،خطاب کرنے والوں میں قاضی رضوان احمد مظاہری ،مولانا منت اللہ شمشی وغیرہ شامل تھے۔ اجلاس عام کا افتتاح تلاوت کلا م اللہ سے شروع کیا گیا اور پھر نعت شریف سے پورے مجمع کو خوش گوار بنا یا گیا ،وہیں اس موقع پر حضرت امیر شریعت کو مدرسہ رحمانیہ کے سکریٹری اور موجودہ مکھیا رزیق شال سے استقبال کیا ۔وہیں اس محفل میںحضرت امیر شریعت س نے سب سے پہلے دو نکاح پڑھائے اور پھر۶۰ فا رغین حفاظ کرام کے سروں پر یکے با دیگرے دستار بندی باندھے حالانکہ خرا ب موسم میں بھی حضرت امیر شریعت خطاب کرتے رہے اور عوام نے دل جوئی سے حضرت کی باتوں کو بغور سنا،اس موقع پر مولانا زبیر قاسمی دربھنگہ ، حاجی انصارالحق ،قاری شرف الدین ،محمد تجمل حسین ضلع پریشد ممبر سمیت درجنوں علماء ودانشوران موجود تھے ۔

Tags

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker