ہندوستان

امت کی ہمہ جہت قیادت آج کی سب سے بڑی ضرورت : مولانا خالد سیف اللہ رحمانی

ایم ایس رحمانی اسکول میں مومنون ڈے کا اہتمام

حیدرآباد:24 اپریل(پریس ریلیز)

آج کے مشکل دور میں امت کے میں اس بات کی ضرورت محسوس کی جاتی رہی ہے کہ امت کے درمیان ایسے قائدین اور رجال کار تیار ہوں جو امت کی ہر محاذ پر دینی، تعلیمی، سیاسی اور فکری قیادت کا فریضہ بحسن وخوبی سرانجام دے سکیں،ایک طرف جہاں وہ عصری علوم ومعارف سے لیس ہوں، وہ لسان قوم پر قادر ہوں، زمانہ شناسی وحالات آگاہی سے آراستہ ہوں، اسی کے ساتھ ساتھ ان کے اندر دینی وملی غیرت اور اخلاص کا جذبہ بھی ہو، وہ زبان و علم، فکر وشعور اور جسمانی طاقت وقوت ہر چیز میں ممتاز اور پختہ ہوں، چونکہ ایک مضبوط دماغ ایک صحت مند جسم میں ہی رہ سکتا ہے، ان خیالات کا اظہار حضرت مولانا خالد سیف اللہ رحمانی دامت برکاتہم ( بانی وناظم المعہد العالی الاسلامی وسکریٹری وترجما ن آل انڈیا مسلم پرسنل لابورڈ) نے ایم ایس رحمانی اسکول کے طلبہ کے پروگرام میں کیا، (Muminoon Day) یعنی ’’یوم مومنین‘‘ کے عنوان سے نوعمر طلبہ کا تعلیمی، ثقافتی اور جسمانی سرگرمیوں کے مظاہرہ پر مشتمل نہایت رنگا رنگ اور یادگار پروگرام کا انعقاد عمل میں آیا۔

 ایم ایس رحمانی اسکول المعہد العالی الاسلامی حیدرآباد اور ملک کے مشہور تعلیمی ادارہ ایم اس ایجوکیشن اکیڈمی کے اشتراک سے چلنے والا اپنی نوعیت کا ایک منفرد ادارہ ہے، یہ ایک خواب ہے کہ موجودہ تعلیمی نظام میں ایسی لچک پیدا کی جائے کہ ہمارے نونہالان قوم عصری ودینی دونوں میدانوں میں باصلاحیت بن کر نکلیں اور دنیا وآخرت دونوں کا خیر جمع کرکے امت کے لئے زیادہ سے زیادہ نافع وکارآمد ثابت ہوپائیں، یہ ادارہ حضرت مولانا خالد سیف اللہ رحمانی کے زیر پرستی اور آپ کی رہنمائی میں کام کرتا ہے، ادارہ کی براہ راست نگرانی مولانا مفتی محمد عمر عابدین قاسمی مدنی کرتے ہیں، ادارہ میں عصری مضامین میں کسی قسم کی کمزوری ولاپرواہی کو جگہ دئے بغیر حفظ قرآن، عربی زبان، تفسیر، حدیث، فقہ اسلامی ، تاریخ اسلام اور فکر اسلامی کے منتخب مضامین پڑھائے جاتے ہیں، اور طلبہ کو عصری مضامین میں مہارت کے ساتھ ان کے اندر دینی مزاج اور اسلامی اسپرٹ پیدا کرنے کی کوشش کی جاتی ہے،اور ہدف ہے کہ طلبہ جب اس نظام تعلیم سے فارغ ہوں تو عصری مضامین کے ساتھ شرعی مضامین کے بھی واقف کار اور عالم ہوں،پروگرام میں طلبہ نے قرآت، حمد ونعت، عربی اردو انگریزی زبان میں تقریروں کے ساتھ ساتھ تیر اندازی، گھڑسواری ، کراٹے اور دیگر جسمانی ورزش اور صحت کے نہایت حیران کن مظاہرے کئے، ملک کے ممتاز ماہرین تعلیم اور عمائدین شہر نے نونہال طلبہ کی بھرپور حوصلہ افزائی کی اور بے حد تاثر اور پسندید گی کا اظہار کیا، اور اس نمونہ کو پورے ملک کے لئے لائق تقلید بتایا، حفظ قرآن کی تکمیل کرنے والے طلبہ کی دستار بندی ہوئی، اور سال بھر عمدہ تعلیمی واخلاقی کارکردگی پر طلبہ کو انعامات سے بھی سرفراز کیا گیا، پروگرام سے ایم ایس کے مینیجنگ ڈائریکٹر جناب انور احمد صاحب نے اہم خطاب کیا، اور ایم ایس رحمانی اسکول کے مقاصد واہداف اور اس سے متعلق اپنے دور رس خیالات اور عزائم کا اظہار کیا، ڈائریکٹر جناب سید مصباح الدین صاحب نے بھی اہم خطاب کیا اور اسکول سے اپنے والہانہ تعلق کا اظہار کیا، نیز اسکول کے نگراں جناب مولانا عمر عابدین قاسمی مدنی نے بھی اسکول کے نظام ، نصاب تعلیم، تربیتی منہج اور مختلف سرگرمیوں پر تفصیل سے روشنی ڈالی، سبھوں نے ان بچوں کے اساتذہ اور ان کے والدین کو مبارکباد دی اور نیک تمناؤں کا اظہار کیا، نیز اسکول کے قابل اور بچوں کی صلاحیت سازی کے لئے شب وروز محنت کرنے والے اساتذہ کو بھی اعزاز دیا گیا،پروگرام کے اہم شرکاء میں ڈاکٹر محمد سعید (بنگلور)،جناب معظم حسین (سینئر ڈاریکٹر ایم ایس)اور مفتی محمد بانعیم صاحب رہے،مولانا رحمانی کی دعا پر پروگرا م کا اختتام ہوا۔

ایک تبصرہ

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker