مسلم دنیا

ماہ صیام کا تیسرا جمعہ: ایک لاکھ سے زائد فلسطینیوں نے قبلہ اول میں نماز جمعہ ادا کی

رکاوٹوں کو عبور کرکے قافلوں کی شکل میں فلسطینی مسجد اقصیٰ پہنچے

مقبوضہ بیت المقدس۔۲۴؍مئی: اسرائیلی فوج کی طرف سے عائد کردہ پابندیوں اور رکاوٹوں کے باوجود ایک لاکھ سے زیادہ فرزندان توحید نے مسجد اقصیٰ میں ماہ صیام کے تیسرے جمعہ کی نماز ادا کی۔اطلاعات فلسطین کے مطابق جمعہ کو علی الصباح القدس اور آس پاس کے شہروں‌سے فلسطینی قافلوں‌کی شکل میں مسجد اقصیٰ‌ پہنچنا شروع ہوگئے تھے۔ماہ صیام کے تیسرے جمعہ کے موقع پر اسرائیلی فوج کی بھاری نفری بیت المقدس اور آس پاس کے شہروں میں تعینات کی گئی تھی تاکہ فلسطینی شہریوں کو قبلہ اول تک پہنچنے سے روکا جاسکے۔مگر صہیونی انتظامیہ کی رکاوٹیں توڑ کر ایک لاکھ فلسطینی مسجد اقصیٰ پہنچنے میں کامیاب رہے۔ مقامی فلسطینی شہریوں کا کہنا ہے کہ اسرائیلی فوج نے نام نہاد سیکیورٹی کی آڑ میں 40 سال سے کم عمر افراد کو القدس میں داخل ہونے سے روک دیا ہے۔ادھر ایک 45 سالہ فلسطینی نے بتایا کہ اسے عمر کی شرط پوری ہونے کے باوجود مسجد اقصیٰ میں نماز جمعہ کی ادائی کے لیے آنے سے روک دیا گیا۔خیال رہے کہ قابض صہیونی ریاست نے بیت المقدس اور اطراف کے شہروں میں بسنے والے فلسطینیوں‌کو مشروط طور پر قبلہ اول میں نماز جمعہ کی ادائی سے روک دیا تھا۔ اطلاعات کے مطابق تیسرے جمعہ کی شب کو ایک لاکھ سے زیادہ مسلمانوں نے مسجد اقصیٰ میں حاضری دی اور عشاء اور تراویح کی نمازیں باجماعت اداکیں۔اور صبح ہوکر مسجد اقصی میں ماہ صیام کے تیسرے جمعہ کی نماز ادا کی۔ اسلامی اوقاف انتظامیہ نے نماز عشاء اور تراویح میں مسلمانوں کی زیادہ تعداد کی آمد کے پیش نظر مسجد کے تمام اہم مقامات اورخواتین کے لیے مختص نمازکی جگہوں کو کھول دیا گیاتھا۔ادھر مسجد اقصیٰ کے ڈائریکٹر الشیخ عمر الکسوانی نے کہا مسجد اقصیٰ میں ماہ صیام کے تیسرے عشرے کے لیے اعتکاف کی رجسٹریشن شروع کر دی گئی ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ ماہ صیام کے آخری عشرے کا اعتکاف کل سے شروع ہوگا اور عید کا چاند نظر آنے تک جاری رہے گا۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker