ہندوستان

جلیاں والا باغ سانحہ کے سوسال ہونے پر ’’ماہنا مہ بچوں کی دنیا ‘‘خصوصی شمارہ

نئی نسل کے لیے ملک وملت کی تاریخ سے آگاہی نہایت ہی ضروری ہے۔مرزا خضر
اورنگ آباد :27/مئی (بی این ایس )
نئی نسل کے لیے ملک وملت کی تاریخ سے آگاہی نہایت ہی ضروری ہے،تاریخ کے بغیر کوئی بھی قوم و ملک اپنی شناخ وحیثیت طئے نہیں کرسکتی ہے۔ان خیالات کااظہارر ڈاکٹر مرزا خضر (سابق صدر شعبہ تاریخ مولانا آزاد کالج فارویمن ) نے محسن احمد اردو پرائمری اسکول اورنگ آباد میں۲۵؍ مئی صبح گیارہ بجے ریڈاینڈ لیڈ فاؤنڈیشن کی جانب سے قومی اردو کونسل دہلی سے شائع ہونے والے رسالہ’’ماہنامہ بچوں کی دنیا‘‘کے جلیان والا باغ واقعہ کو سو سال ہونے پر شائع خصوصی شمارہ کے رونمائی کے وقت کیا۔ ڈاکٹر ذاکر پٹھان (صدر شعبہ تاریخ بدناپورکالج ) نے جلیان والا باغ حادثہ کی تاریخ اور اس کے پس منظرپر تفصیل سے گفتگو کرتے ہوئے کہاکہ ۱۳؍اپریل 1919کو بیساکھی کے تہوار کے موقع پر یہ عظیم الشان حادثہ رونماہوا جس میں کئی ہندوستانیوں کی جانیں گئیں،انگریزیوںنے ڈاکٹر ستیہ پال سنگھ اور ڈاکٹر سیف الدین کچلو کو گرفتار کر لیاتھا جس کی وجہ سے عوام میںزبردست بے چینی پیدا ہوگئی تھی ۔انگریز حکومت نے رولٹ ایکٹ پاس کیا جس کی روسے کسی بھی ہندوستانی کو جب چاہے اور جہاں چاہئے بغیر کسی گواہ و ثبوت اور صرف شک کی بنیاد پرگرفتار کرلیاجاتاتھا۔ اس قانون کے خلاف پورے ملک میں زبردست تحریک چلائی گئی۔دفعہ 144لگا دی گئی۔ جنرل ڈائرنے معصوم لوگوں پر گولی چلانے کا حکم دیاایک ہزار سے زائد لوگ شہید ہوئے ۔ ڈاکٹر شیخ اعجاز نے اپنی مخاطبت میں کہاکہ اب وقت آگیا ہے کہ ہم اپنی تاریخ کو از سر نو ترتیب دیں اور نئی نسل کے لیے آسان اور عام فہم زبان میں اس کو شائع کریں۔ پروگرام میں یہ طئے کیاگیا کہ نئے تعلیمی سال کے آغازمیں اورنگ آباد کے اردو اسکولوںمیں جلیان والا باغ حادثہ پر’’ماہنامہ بچوںکی دنیا ‘‘کا خصوصی شمارہ ریڈ اینڈ لیڈ فاؤنڈیشن کی جانب سے مفت میں دیاجائے گا ساتھ ہی یہ بھی فیصلہ لیاگیا کہ اورنگ آباد ،مہاراشٹر اور خصوصاََ ملک کی تاریخ اورمسلم بادشاہوں پر چھوٹے چھوٹے کتابچہ کم قیمت میں طلباء اور عوام الناس کے لیے شائع کیے جائیں گے ،جس کے طلباء اور عوام میں تاریخ سے دلچشپی کے ساتھ مطالعہ کا شوق پیدا ہوگا۔ واضح رہے کہ ریڈاینڈلیڈ فاؤنڈیشن کامشہور پروگرام’’چلو کرتے ہیں باتیں کتابوںسے‘‘ ،’’مصنف سے ملیئے ‘‘کے تحت نئی کتابوں کی اشاعت اور شہر میں کسی ادیب ،شاعر ،مصنف کی آمدپر مختلف پروگراموں کا انعقاد کیاجاتاہے اس طرح کی معلومات فاؤنڈیشن کے صدر مرزاعبدالقیوم ندوی نے پروگرام کے ابتداء میں دی۔ پروگرا میں ڈاکٹر عبداللہ چاؤش سر (ڈاکٹر رفیق زکریا کالج فار ویمن) ڈاکٹر عبدالعزیز عرفان، ڈاکٹر شاہین فاطمہ نے بھی اپنے خیالات کااظہار کیا ۔ محسن احمد (سابقہ کارپوریٹر ) نے مہمانوں کا استقبال افتتاحی کلمات اور شکریہ اداکیا جبکہ پروگرام کو کامیاب بنانے میں شیخ نعمان احمد اہم کردار نبھایا۔

Tags

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker