ہندوستان

پانچ سال کی بچی کا اغوا، عصمت دری کے بعد قتل

 

اجین، 8 جون( بصیرت نیوز سروس )

مدھیہ پردیش کے اجین میں انسانیت کو شرمندہ کرنے والا حادثہ سامنے آیا ہے، مذہبی شہر اجین میں پانچ سال کی معصوم بچی کو اغوا کر کے قتل کرنے کا معاملہ سامنے آیا ہے۔ یہ دردناک حادثہ لال پل، بھوکھی ماتا روڈ کے کنارے بنے اینٹ بھٹے پر کام کرنے والے مزدور دنپتی کی بیٹی کے ساتھ ہوا ہے۔ معصوم کے والد کا کہنا ہے کہ: جمعرات کی رات بچی ان کے پاس ہی سو رہی تھی، رات قریب دو بجے ان کی آنکھ کھلی تو بچی غائب تھی۔ جس کے بعد خاندان کے سبھی افراد بچی کو تلاش کرنے لگے، رات بھر تلاش کرنے کے بعد بھی جب وہ نہیں ملی تو صبح پولس نے نامعلوم مجرم کے خلاف معاملہ درج کر کے بچی کی تلاش شروع کی، جمعہ کی دوپہر کو بچی کی نعش شپرا ندی میں ملی۔ موقع پر پہنچی پولس نے بتایا کہ بچی کے بدن پر کپڑے نہیں تھے اور سر پہ کافی گہری چوٹ کے چار نشانات تھے۔ نعش کو قبضے میں لینے کے بعد پولس نے شام کو پوسٹ مارٹم کروایا۔

ڈاکٹروں نے کہا کہ بچی کے ساتھ عصمت دری کا بھی معاملہ بھی پیش آیا ہے۔
پولس، مجرم کا سراغ لگانے کے لیے اینٹ بھٹے پر کام کرنے والوں سے پوچھ تاچھ کر رہی ہے۔
مہاکال تھانہ ٹی آئی اروند سنگھ تومر نے بتایا کہ بچی کی نعش جہاں سے برآمد کی گئی ہے وہیں پاس میں خون سے سنی ہوئی اینٹ ملی ہے، شک ہے کہ اسی اینٹ سے بدمعاش نے بچی کے سر پر حملہ کیا تھا، پولس کا ماننا ہے کہ حادثے کو انجام دینے والا یقینی طور پر کوئی جاننے والا ہی ہے اور بچی بھی اسے پہچانتی تھی؛ اس لیے اس نے مار ڈالا۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker