ہندوستان

اردو اسکولوں میں مراٹھی زبان کو فروغ دینے کے لیے ایک روزہ مذاکرہ کا انعقاد

مہاراشٹر کے مسلم طلباء مراٹھی زبان کی وجہ سے پیچھے رہ جاتے ہیں. مرزا عبدالقیوم ندوی
اورنگ آباد: 13 /جون(پریس ریلیز)
اورنگ آباد مہاراشٹر میں ریڈ اینڈ لیڈ فاؤنڈیشن کی جانب سے اردو مدارس میں ریاستی زبان مراٹھی کی موجودہ صورتحال پر مذاکرہ کا انعقاد پرائم اسٹار انگلش ہائی اسکول مجیب کالونی میں عمل میں آیا. واضح رہے کہ امسال دسویں اور بارہویں جماعت کے نتائج سامنے آنے کے مہاراشٹر میں ہنگامہ برپا ہو گیا ہے کہ ان دونوں جماعتوں کے لاکھوں طلباء ریاستی و اپنی مادری زبان مراٹھی میں فیل ہوگئے ہیں. یہ نتائج مراٹھی ذریعہ تعلیم والے اسکولوں کی ہے. اس کے برعکس اردو میڈیم کے اسکولوں کی صورتحال اس سے بہتر ہے. ان حالات کے تناظر میں آج شہر کی تعلیمی، سماجی تنظیموں کے ذمہ داران کے لیے ریڈ اینڈ لیڈ فاؤنڈیشن کے زیر اہتمام اور پرائم انگلش اسٹار اسکول کے اشتراک سے منعقد کیا گیا تھا، مذاکرہ کی صدارت ایڈوکیٹ محبوب پٹھان(سابقہ سیکرٹری اورنگ آباد میونسپل کارپوریشن) فرما رہے تھے۔
مرزا عبدالقیوم ندوی نے مذاکرہ کی غرض و غایت بیان کرتے ہوئے کہا کہ گزشتہ دنوں مہاراشٹر اسٹیٹ بورڈ کے دسویں اور بارہویں کے امتحانات کے نتائج نے مہاراشٹر کو ہلا کر رکھ دیا. جس میں کہ ریاستی زبان مراٹھی میں وہ طلباء فیل ہوگئے ہیں جن کی مادری زبان مراٹھی ہیں اور ان کی تعداد لاکھوں میں ہیں. مرزا نے یہ بھی کہا کہ شہروں میں بسنے والے مسلمانوں کو جس طرح مراٹھی زبان آنے چاہیے نہیں آتی ہیں، مہاراشٹر کے مسلم طلباء تمام مضامین میں ہوشیار ہوتے ہیں صرف مراٹھی زبان میں کمزور ہونے کے سبب وہ راستی ملازمتوں اور مقابلہ جاتی امتحانات میں شریک ہونے کے باوجود فیل ہوجاتے ہیں یا مطلوبہ نمبرات حاصل نہیں کرتے ہیں. ممرزا سلیم بیگ نے حکومت کی جانب سے اردو اسکولوں میں چلائے جانے والے مراٹھی فاؤنڈیشن کورس کی موجودہ صورتحال کا جائزہ پیش کرتے ہوئے کہا کہ اس کورس سے طلباء خاطرخواہ فائدہ نہیں اٹھا پا رہے ہیں. شرکاء مذاکرہ نے تفصیل کے ہر پہلو پر مثبت گفتگو کرتے ہوئے مندرجہ ذیل چھ نکات پر مراٹھی زبان پر مسلم بچوں خصوصاً اردو میڈیم کے طلباء آسانی اور مہارت کے ساتھ مراٹھی زبان میں گفتگو اور لکھنا پڑھنا آجائے اس کے لیے تین سالہ منصوبہ بندی بنانے کا فیصلہ لیا گیا اسی کے ساتھ 6 جولائی کو اورنگ آباد کے تمام اردو میڈیم کے مراٹھی زبان کے اساتذہ کے لیے ایک روزہ ورک شاپ رکھنے کا طے پایا. جبکہ مذاکرہ میں مرزا سلیم بیگ، شیخ منصور، خان جمیل، صلاح الدین صدیقی، ضیاء الدین سر، ڈاکٹر ایس وی رضوی، کلیم الدین سرموجود تھے-

Tags

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker