ہندوستان

جھارکھنڈ: ماب لنچنگ روکنے گئی پولس پر حملہ ، بھیڑ منتشر کرنے کےلیے پولس کا لاٹھی چارج اور فائرنگ ، چار گرفتار

رانچی۔۱۵؍جولائی: جھارکھنڈ کے گریڈیہہ ضلع کے بگودر تھانے کے علاقے میں اتوار کے دن تقریباً پونے چار بجے دھنباد کی جانب سے ایک کنٹینر آرہا تھا، جی ٹی روڈ بیکو کے مرغیانٹوگری کے پاس کنٹینر میں ممنوعہ گوشت لدا ہونے کی خبر پر بگودر میںاتوار کو جم کر ہنگامہ ہوا، کنٹینر سے لگاتار خون رس رہا تھا ، اس پر نیمیا گھاٹ کے کچھ لوگوں کی نظر پری تو انہیں شک ہوا کہ اس میں شاید ممنوعہ گوشت لے جایاجارہا ہے، اس کے بعد چار پانچ بائیک سواروں کنٹینر کے پیچھے ہولیے، ڈرائیور نے دیکھا کہ پیچھا کیاجارہا ہے تو وہ کنٹینر کو کھڑا کرکے فرار ہوگیا، اس درمیان بائیک پر سوار لوگ پہنچ گئے اور علاقے میں خبر پھیل گئی کہ گاڑی میں ممنوعہ گوشت اور گئو ونش ہے۔ یہ خبر پورے علاقے میں آگ کی طرح پھیل گئی موقع پر جمع لوگوں نے کنڈیکٹر محمد قادر (مرادآباد کے رہنے والے) کو پکڑ لیا اور اسے بری طرح مارنے پیٹنے لگے، اس دوران کنٹینر کا شیشہ توڑ کر جی ٹی روڈ کو جام کردیاگیا۔ مشتعل بھیڑ نے محمد قادر کو جم کر پیٹا، بھیڑ نے اسے بچانے کی کوشش کررہی پولس پر بھی حملہ کردیا، اور کنٹینر کو آگ کے حوالے کرنے پر آمادہ ہوگئی۔ پتھرائو میں بگودر تھانے دار سمیت کئی پولس اہلکار زخمی ہوگئے۔ پولس نے آٹھ رائونڈ فائرنگ اور لاٹھی چارج کرکے بھیڑ کو منتشر کیا۔ بگودر تھانہ انچارج نوین کمار سنگھ نے بتایاکہ کنٹینر کو جلانے کی کوشش کی گئی اور محمد قادر کے ساتھ مارپیٹ کی گئی ہے۔ اطلاع ملنے پر جب ہم پہنچے او ربھیڑ سے قادر کو نکالنے کی کوشش کرنے لگے تو لوگوں نے ہم پر ہی حملہ کردیا۔ ہتھیار بھی چھننے کی کوشش کی گئی ہے ایسے میں ہمیں ہوائی فائرنگ کرنے پڑی ۔ اس معاملے میں چار لوگوں کو گرفتار کرلیاگیا ہے۔ سریا، بگودر ایس ڈی پی او ونود کمار مہتو نے کہاکہ کنٹینر میں ملے کاغذات میں مویشیوں کے ہڈی ہونے کا ذکر ہے۔ زخمی محمد خالد اور پولس کا مقامی اسپتال میں علاج کیاگیا، معاملے میںجو بھی قصور وار ہوگا اس کے خلاف سخت کارروائی ہوگی۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker