ہندوستان

منشیات کے استعمال سے نوجوان نسل تباہی و بربادی کے دہانے پر جارہی ہے : ماہرالقادری

 

نشہ پورے ملک میں ایک بڑی بیماری کی طرح پھیل رہی ہے جس کا روکناسب سے زیادہ اہم ہے: مولانا اسرار احمد بقائ

 

تنظیم پاسبان ملت کی جانب سے سنی جامع مسجد سنگم نگر وڈالا میں علماء کرام کی میٹنگ

 

ممبئی : 23 جولائی (پریس ریلیز)

 

امت مسلمہ اس وقت مختلف طریقے سے مسائل میں گھری ہوئی ہے، کہیں یہود ونصاریٰ کے ذریعے ہم پر ظلم وزیادتی کی جارہی ہے تو کہیں ہم مآب لیچنگ کے ذریعے تشدد کے شکار بن رہے ہیں، عالمی دنیا میں ہمارا وجود بھی اب باطل پرستوں کو کھٹکنے لگا ہے یہی وجہ ہے کہ آج پے در پے ہمیں مختلف ذرائع سے مشکلات کے دھکتے ہوئے انگارے میں ڈالا جارہا ہے وہیں ایک منصوبہ بند طریقے سے قوم مسلم کے شاہین صفت نوجوانوں کو منشیات کا دلدادہ بناکر ان کی زندگی کو مختصر کیا جارہا ہے، جگہ جگہ مسلم علاقوں میں اس ناجائز کاروبار کو فروغ دیا جارہا ہے تاکہ زیادہ سے زیادہ مسلم نوجوان اس مکروہ لعنت کے شکار ہوجائیں، اکثر دیکھا گیا ہے کہ 20 سے 25 سال کا نوجوان نشہ کا عادی ہوکر اپنی زندگی سے ہاتھ دھو بیٹھا ہے اور مسلم دشمن طبقہ اپنے ان ناپاک عزائم کی تکمیل میں کامیاب ہو تا جارہا ہے، جس کے سدباب کے لیے ہمارے پاس اب تک کوئ مضبوط لائحہ عمل نہیں ہے کہ، ہم کس طرح قوم کے نوجوانوں کو اس موذی وائرس سے بچائیں، اس سلسلے میں قیام سے ہی سرگرم رہنے والی نیو تنظیم پاسبان ملت نے غریب زدہ علاقوں کو سامنے رکھ کر نشہ مخالف میٹنگوں کا انعقاد شروع کر دیا ہے.

وڈالا کی مشہور جامع مسجد سنگم نگر میں منقعدہ میٹنگ سے خطاب کرتے ہوئے سرپرست نشست مشہور عالم دین حضرت مولانا عبد الجبار اعظمی ماہر القادری خطیب وامام چشتی ہندوستانی مسجد نے کہا کہ آج پورے ملک میں نشہ آور چیزیں بڑی آسانی کے ساتھ دوکانوں پر دستیاب ہیں جہاں دھڑلے سے حکومتی اہلکاروں کی ملی بھگت سے مسلم نوجوانوں کو شکار بنایا جارہا ہے، آپ نے مزید کہا کہ نوجوان ہی اس ملک کے مستقبل ہیں وہ ایک قیمتی سرمایہ ہیں لیکن وہ کھلی آزادی کے نام پر بے راہ روی کے شکار ہیں آج نشہ خوروں کی وجہ سے ہی مسلم معاشرے کو ہدف تنقید بنایا جاتا ہے جبکہ دیگر اقوام میں بھی یہ چیزیں خوب پائ جاتی ہیں، لیکن مسلم قوم کے نوجوانوں کی غلط کاریوں سے آج میڈیا سے لیکر ارباب اقتدار کے نظروں میں صرف مسلم طبقہ ہی چڑھا ہوا ہے جس کے ذمہ دار بھی ہم خود ہیں، ماہر القادری صاحب نے مزید کہا کہ پاسبان ملت تنظیم نے جو نشہ مخالف پروگرام کئے ہیں یہ بہت ہی خوش آئند اقدامات ہیں لیکن اس تحریک کو کامیابی سے ہم کنار کرنے کیلئے خصوصی طور پر ائمہ کرام کو آگے آنا ہوگا جس کا سب سے بہتر ین ذریعہ خطبہ جمعہ ہے لہذا آئمہ کرام کم از کم 5 منٹ ضرور اصلاح معاشرہ کو موضوع سخن لاتے ہوئے نشہ کے مضر اثرات سے شاہین صفت نوجوانوں کو آگاہ کیا جاسکتا ہے.

علیمی موومنٹ کے صدر مولانا محمد عرفان علیمی نے بھی اپنے بیان میں کہا کہ آج نشہ خوروں کی وجہ سے گھر کا گھر تباہ و برباد ہو رہا ہے، ماں باپ کی امیدوں کا جنازہ نکل رہا ہے، گھر میں ایک بچہ بھی اس لت کا شکار ہو ا تو پورا گھر برائیوں کے نذر ہو جاتا ہے، جس پر مذہبی قائدین کو سر جوڑ کر نشہ کے خلاف عملی طور پر میدان میں آنے کی ضرورت ہے، ملی مذہبی کاموں میں سرگرم حصہ لینے والے علیمی صاحب نے مزید کہا کہ مسلم اکثریتی علاقوں میں اس طریقے سے جگہ جگہ کارنر میٹنگوں کے ذریعے مسلم نوجوانوں کو اس مہلک بیماری سے باخبر رکھنے کی کوشش کرنی چاہیے تاکہ نئی نسل آگے چل کر ملک کی ترقی میں نمایاں کردار ادا کرسکیں، آپ نے علماء کرام سے اپیل کرتے ہوئے کہا کہ اگر ہم نے منشیات کے خلاف صدائے احتجاج بلند نہ کی تو آنے والی نسلیں ہمیں ہرگز معاف نہ کریں گی.

وڈالا کی مشہور علمی اور سماجی شخصیت حضرت مولانا اسرار احمد بقائ صاحب نے عمدہ خیالات کو پیش کرتے ہوئے کہا کہ آج سب سے زیادہ اگر نشہ زدہ علاقے کوئ ہیں تو وہ مسلم علاقے ہیں، جہاں پر یورپی ممالک کی طرح کھلے عام منشیات کا دھندا چل رہا ہے ان پر کوئ روک لگانے والا نہیں ہے، بقائ صاحب نے قوم کے نام پیغام دیتے ہوئے کہا کہ بچوں کی صحیح تربیت ہی انہیں آگے بڑھاتی ہے وہ ڈاکٹر انجینئر وکیل جبھی بنیں گے جب ان میں تعلیمی بیداری آئے گی، بغیر تعلیم کے نہ تو آپ گھر والوں کیلئے قابل احترام ہونگے، نہ ہی ملک کی ترقی میں آپ کا کوئ کردار ہوگا، ضرورت اس بات کی ہے کہ ہم کس طرح سے اپنے بچوں کو نشہ کے دلدل سے نکالیں، لہذا ملی مذہبی تنظیموں کو مساجد کے ائمہ کرام کے ساتھ ساتھ علاقائی تنظیموں انجیوز سے رابطہ قائم کرکے نشہ مکت تنظیم بنانے کی ضرورت ہے، جو تنظیم پاسبان ملت کے پلیٹ فارم سے وابستہ ہوکر ملت کے نوجوانوں کو بیدار کرے، حضرت مولانا عزیز الرحمن نظامی وڈالا نے بھی اس موقع پر اظہار کرتے ہوئے کہا کہ علاقے میں جب سے مشہور سماجی تعلیمی شخصیت عامر بھائی ادریسی کی آمد ہوئی ہے، انہوں نے حضرت مولانا عرفان علیمی کے ساتھ ملکر پورے وڈالا میں منشیات کے خلاف صدائے احتجاج بلند کی ہے اور خود آگے بڑھ کر مسلم نوجوانوں کو اس بری لت سے چھٹکارا دلانے کی کوشش کی ہے، نظامی صاحب نے کہا کہ منشیات کے اسمگلروں کو خاکی وردی کے ساتھ ساتھ سیاسی لبادہ میں لیڈروں کی حمایت بھی ملتی رہی ہے جس کی وجہ سے یہ غلط کاروبار خوب پھیلتا گیااور اس کی جڑیں سیاسی پرورش میں مضبوط ہوگئیں

لہذا منشیات کو روکنے کے لیے غلط سیاسی لیڈروں کو بھی روکنے کی ضرورت ہے، حضرت مفتی محمد اعظم صاحب انٹا پ ہل نے قرآن وحدیث کی روشنی میں نشہ کے خلاف بولتے ہوئے کہا کہ اسلام نے سب سے پہلے اس پر روک لگائی ہے، ام الخبائث قرار دیتے ہوئے نشہ اور چیزوں پر پابندی عائد کی ہے ضرورت ہے کہ علماء کرام مشترکہ طور پر ایک مضبوط لائحہ عمل طے کرتے ہوئے مضافاتی علاقوں میں کام کریں، حضرت مولانا مفتی محمد وسیم نے اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ علماء کرام کا کردار ایک داعی کا ہونا چاہیےاور ان کا کردار نہایت ہی مخلصانہ اور محبتانہ ہو، جس کی وجہ سے نوجوان طبقہ ان سے قریب ہوگا، پھر یہ غلط صحبتوں کے شکار نہیں ہونگے، آپ نے مزید کہا کہ آج دوستی دین کی طرف کم دنیاوی عیاشی کیلئے زیادہ ہوتی ہے، یہی وجہ ہے کہ دوستی کے نام پر مسلم نوجوان غلط ہاتھوں میں جاکر نشہ کا عادی بن جاتا ہےاور اس طرح سے اپنی زندگی خود اپنے ہاتھوں سے برباد کر لیتا ہے، لہذا اس کا سب سے آسان حل یہ ہے کہ ہفتہ واری علاقے کی مساجد میں نشہ مخالف تربیتی نشست رکھی جائے، جس سے ایک خوش آئند اثرات دیکھنے میں آسکتے ہیں، میٹنگ سے قاری عبد الرحمٰن ضیائی گوونڈی نے بھی خطاب کیا.

اختتام میٹنگ پر تنظیم پاسبان ملت کے روح رواں اور فروغِ تعلیم کے لیے ہمیشہ کوشاں رہنے والے جناب عامر ادریسی کو حضرت علامہ عبد الجبار صاحب اعظمی ماہر القادری نے ڈھیر ساری دعاؤں سے نوازتے ہوئےآپ کو نوجوانوں کا ہمدرد قرار دیااور مستقبل کیلئے نئ خواہشات کا اظہار کیا.

 

میٹنگ میں حلقہ وڈالا کے کثیر علماء کرام و ائمہ مساجد شریک تھے جس میں حضرت مولانا شاکر علیمی، حضرت مولانا سراج برکاتی،حضرت مولانا رونق علی، حضرت مولانا ابو تراب، حضرت مولانا غلام خواجہ، حضرت قاری جان محمدکے علاوہ مسجد کے سرکردہ اراکین ودیگر حضرات موجود تھے.

Sajid Qasmi

غفران ساجد قاسمی تعلیمی لیاقت : فاضل دارالعلوم دیوبند بانی چیف ایڈیٹر بصیرت آن لائن بانی چیف ایڈیٹر ہفت روزہ ملی بصیرت ممبئی بانی و صدر رابطہ صحافت اسلامی ہند بانی و صدر بصیرت فاؤنڈیشن

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker