مسلم دنیا

حجاج کرام نے شیطان کو کنکریاں ماریں

 

مناسک حج کے اختتامی مرحلے میں بال ترشوائے ، قربانی کی ، رمی جمرات کا سلسلہ کل بھی جاری رہے گا

مکۃ المکرمہ: ۱۱؍اگست(ایجنسی) سعودی عرب میں اتوار کو عیدالاضحی کے پہلے روز لاکھوں حجاج پیدل چلتے ہوئے عقبٰی میں واقع جمرات گئے جہاں انھوں نے شیطان کو کنکریاں ماریں۔حجاج نے مناسکِ حج کی ادائیگی کے اختتامی مراحل میں بال ترشوائے، عید الاضحی کی نماز ادا کی اور قربانی کی۔کنکریاں مارنے کا سلسلہ پیر کو بھی جاری رہے گا۔العقبٰی جہاں اتوار کو منٰی سےحجاج پیدل چل کر پہنچے، وہ مقام ہے جہاں حاجی سات سات کنکریاں پھینکتے ہیں جسے شیطان کو کنکریاں مارنے سے تعبیر کیا جاتا ہے۔سکیورٹی حکام بڑی تعداد میں اس مقام پر اور آس پاس موجود رہے اور24 لاکھ سے زائد حجاج کرام کی رہنمائی کرنے کے ساتھ ساتھ حفاظتی انتظامات کی نگرانی کر تے رہے۔ واضح رہے کہ ۲۰۱۵ میں منٰی میں بھگدڑ مچ جانے سے سینکڑوں حجاج کی جان چلی گئی تھی۔ گزشتہ پچیس برس میں یہ سب سے زیادہ جان لیوا حادثہ ثابت ہوا تھا۔اس حادثے کے بعد سے حکام ہر برس زیادہ احتیاطی تدابیر اختیار کرتے ہیں اور جمرات کے پُل پر خاص طور سے انتہائی حفاظتی اقدامات کیے جاتے ہیں۔دنیا بھر سے آئے ہوئے لاکھوں حجاج نے سنیچر کو حج کا اہم ترین رکن وقوف عرفہ ادا کرنے کے بعد مزدلفہ میں رات گزاری تھی ۔ وہاں سے منیٰ پہنچے جہاں انہوں نے علی الصبح بڑے شیطان کو کنکریاں مارنے کے بعد بال منڈوائے اور قربانی کرنے کے بعد احرام کھول دیے پھرحجاج نے طواف زیارت اور سعی کی۔جمرات پل انتظامیہ کے مطابق جمرات کی نچلی منزل سمیت تمام بالائی منزلیں رمی کیلئے کھول دی گئیںتھیں۔ جمرات جانے والے تمام راستوں پر خصوصی حج فورس کے اہلکار تعینات ہیں جو حجاج کی آمد رفت کو کنٹرول کر رہے ہیں۔حجاج کی آسانی اور سہولت کے لئے خیموں کے حساب سے رمی کا جدول مقرر تھا جس کی پابندی کرتے ہوئے حجاج نے رمی کیا۔ حج انتظامیہ نے تمام خیموں میں جمرات کی موجودہ صورتحال اور رش کا اندازہ لگانے کے لئے اسکرینیں نصب کردی تھی۔ادھر مذبح خانوں میں قربانی کے لاکھوں جانور ذبح کیے گئے اور اضاحی پروجیکٹ کے تحت قربانی کا گوشت تمام اسلامی ممالک میں تقسیم کے لیے روانہ کیاجائے گا۔ قبل ازیں خادم حرمین شریفین شاہ سلمان بن عبدالعزیز ہفتے کو منی پہنچے جہاں منی پیلس میں گورنر مکہ مکرمہ نے ان کا خیر مقدم کیا۔ شاہ سلمان بن عبدالعزیز منی میں حجاج کو فریضہ حج کی ادائیگی میں سہولت کے لئے فراہم کی جانے والی خدمات کی نگرانی کی۔ اطلاعات کے مطابق شاہ سلمان طرف سے حکومت کی میزبانی میں حج کرنے والے ساڑھے چھ ہزار حجاج کرام کی قربانی کے اخراجات اپنی طرف سے ادا کرنے کا حکم دیا تھا۔سعودی وزیر برائے مذہبی امور و دعوت وارشاد اور خادم الحرمین الشریفین کے خصوصی حج پروگرام کے جنرل سپروائزر الشیخ ڈاکٹر عبداللطیف آل الشیخ نے بتایا کہ شاہ سلمان کی ہدایت پرساڑھے چھ ہزار حجاج کرام کی قربانی کے تمام اخراجات حکومت برداشت کرے گی۔ واضح رہے کہ خصوصی حج پروگرام کے تحت مجموعی طورپر 79 ممالک کے ساڑھ چھ ہزار مسلمان فریضہ حج ادا کر رہے ہیں۔

Sajid Qasmi

غفران ساجد قاسمی تعلیمی لیاقت : فاضل دارالعلوم دیوبند بانی چیف ایڈیٹر بصیرت آن لائن بانی چیف ایڈیٹر ہفت روزہ ملی بصیرت ممبئی بانی و صدر رابطہ صحافت اسلامی ہند بانی و صدر بصیرت فاؤنڈیشن

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker