ہندوستان

ہنگولی فرقہ وارانہ فساد میں پولس کارروائی سے خوف و ہراس کا ماحول

 

جمعیۃ علماء مہاراشٹر کے صدر حافظ ندیم صدیقی کی اعلیٰ پولیس حکام سے بات چیت

ممبئی۔۱۳؍ اگست ( پریس ریلیز ) اس وقت شر پسند عناصر قانون کی پرواہ کئے بغیرملک کے امن و آشتی کو ختم کرنے اور اقلیتی طبقہ با الخصوص مسلمانوں کو ہراساں کرنے کے لئے پوری طرح سرگرم ہوچکے ہیں، جس کا تازہ ثبوت ہنگولی میںعید الاضحی کے دن عین عید کی نماز دگانہ کے موقع پر ہونے والا فرقہ وارنہ فساد ہے ،جس میں فسادیوں نے کانوڑیا جلوس گزرنے کے دوران ماحول کو بگاڑنے کے لئے ہنگولی شہر میں اوندھا روڈ پر واقع عیدگاہ کے سامنے جم کر اشتعال انگیز نعرہ بازی کی ، منع کرنے پر مزید شدت اختیار کی جس کے نتیجہ میں دونوں گروپ آپس میں بھڑ گئے اور پتھرائو کرنے لگے جس میں نشانہ بھی مسلمان بنے ہیں اوربعد میں پولیس کی جانب سے کارروائی بھی انہیں کے خلاف ہورہی ہے۔ یہ باتیںآج یہاں جمعیۃ علماء مہاراشٹر کے صدر مولانا حافظ ندیم صدیقی نے کہی ہیں۔انہوں نے کہا کہ فساد کی خبر ملتے ہی میں نے ہنگولی کے ضلع کے ایس پی یو گیش کمار، آئی جی پرکاش متیال اور کلکٹر روچیش جے ونشی سے رابطہ قائم کیا، جس کے بعد انہوں نے یک طرفہ کارروائی سے انکار کیا اور کہا کہ جو بھی خاطی ہیں انہیں گرفتار کیا جارہا ہے، مگر جمعیۃ علماء ہنگو لی کی رپورٹ کے مطابق پولیس کی موجودگی میں اقلیتی طبقہ سے تعلق رکھنے والے لوگوں کی گاڑیوں کو چن چن کر نشانہ بنایا گیا ہے یہ بھی رپورٹ ہے کہ خود پولیس نے ہی نقصان پہونچایا ہے ،اس معاملے میں ریاست کے اعلیٰ ذمہ دار وںسے رابطہ قائم کیا گیا ہے اورضلع کے اعلیٰ پولیس اہلکاروں سے بھی بات کی گئی ہے اور انہوں نے اس بارے میں انصاف سے کام لینے اور خاطیوں کی گرفتاری اور سزاء دینے کی یقین دہانی کرائی ہے۔اطلاع کے مطابق عید الاضحی کے دن ہنگولی شہر میں اونڈھا روڈ پیرواقع عید گاہ میںنماز ادائیگی کے بعد خطبہ کے دوران شراون سوموار کے موقع پرشیو سینا کی جا نب سے کاوڑ یاجلوس نکالا گیا تھا جس میں بڑی تعداد میں لوگ شریک تھے جلوس میں شامل شر پسند عناصر نے جلوس کے عیدگاہ کے رو برو پہونچتے ہی اشتعال انگیز نعرہ بازی کرنے لگے۔ذمہ داروں کی جا نب سے سمجھانے پر انہوں نے نعروں میں مزید شدت اختیار کر لی اور دیکھتے ہی دیکھتے دونوں گروپوں میں پتھرائو شروع ہو گیا اور فرقہ وارانہ فساد کی شکل اختیار کر گیا ۔ شرپسند فسادیوں نے پولیس کی مو جود گی میں اقلیتوں کی املاک اور گاڑیوںکو نقصان پہونچایا ،آپسی پتھرائو میںکئی افراد زخمی بھی ہوئے ہیں جن کا علاج و معالجہ جاری ہے، فی الحال حالات قابو میں ہیں ۔ صدر جمعیۃ علماء مہاراشٹر کی جانب سے اس سلسلے میں اعلیٰ پولیس حکام سے بات ہوئی ہے اور انہوں نے اس معاملے میں یک طرفہ طور پر کارروائی سے انکار کرتے ہوئے خاطیوں کو کسی قیمت پر نہ چھوڑنے کی بات کہہ رہے ہیں، لیکن مقامی لوگوں میں یک طرفہ طور پر کارروائی سے خوف وہراس پایا جارہا ہے ۔ صدر جمعیۃ علماء مہاراشٹر نے حکومت مہاراشٹر سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ اس معاملے میں اعلیٰ پولیس حکام کو یک طرفہ کارروائی کو روکنے کی ہدایت جاری کرے اور جو خاطی ہیں ان کے خلاف سخت ترین کارروائی کی جائے اور بے گناہوں کو ہراساں نہ کیا جائے۔

Sajid Qasmi

غفران ساجد قاسمی تعلیمی لیاقت : فاضل دارالعلوم دیوبند بانی چیف ایڈیٹر بصیرت آن لائن بانی چیف ایڈیٹر ہفت روزہ ملی بصیرت ممبئی بانی و صدر رابطہ صحافت اسلامی ہند بانی و صدر بصیرت فاؤنڈیشن

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker