ہندوستان

جنوبی ہند میں دہشت گردانہ حملوں کا اندیشہ، جیش کے ۵۰ دہشت گردوں کی ملک میں داخل ہونے کی اطلاع

نئی دہلی۔ ۹؍ستمبر: سرحد پر حفاظت کے لیے تعینات بی ایس ایف کے مطابق دہشت گرد تنظیم جیش محمد کے دہشت گرد ملک میں کسی بڑے حملے کوانجام دینے کی فراق میں ہیں۔ بی ایس ایف سے منسلک ذرائع کے مطابق 50 دہشت گرد ہندوستان میں حملہ کرنے کے کوشش میں ہیں۔ جیش کے یہ دہشت گرد سمندری راستے سے ہندوستان میں داخل ہوکر اپنے ناپاک منصوبوں کو عملی جامہ پہنانے کی تیاری کررہے ہیں۔ بی ایس ایف ذرائع کے مطابق جیش کے دہشت گردوں کو پاکستان میں ڈیپ غوطہ خوری کی ٹریننگ دی جارہی ہے۔ ذرائع کے مطابق غوطہ خوری کی ٹریننگ لے رہے دہشت گردوں کو یہ ٹریننگ بھی دی جارہی ہے کہ سمندر میں تعینات سیکوریٹی اہلکاروں پر حملہ کیسے کریں، ذرائع کے مطابق بی ایس ایف کی اس رپورٹ کو جنوبی کمانڈ کو بھیج دیاگیا ہے۔ فوج الرٹ ہے۔ بی ایس ایف کی رپورٹ کے درمیان ہندوستانی فوج نے بھی سر کریک علاقے میںکشتی پائے جانے کی اطلاع دیتے ہوئے ملک کے جنوبی حصے میں دہشت گردانہ حملہ کا اندیشہ ظاہر کیا ہے۔ ہندوستانی فوج کی جانب سے لیفٹننٹ جنرل سینی نے دہشت گردوں کی تلاش کےلیے مہم شروع کرنے کی بھی جانکاری دی تھی۔ فوج کے ایک سینئر اہلکار نے کہا کہ سوموار کو گجرات کے سرکریک میں مشتبہ کشتی پائی گئی ہے اس کے بعد دہشت گردانہ حملوں کا الرٹ جاری کیاگیا ہے۔ یہ گجرات کے کچھ علاقے کے ذریعے پ اکستانی کمانڈوں کے ہندوستانی علاقوں میں گھسنے کی خفیہ جانکاری ملنے کے بعد آئی ہے۔ جنوبی کمان کے جنرل کمانڈنگ افسر ایس کے سینی نے حملے کا اندیشہ ظاہر کیا ہے۔ نیوز ایجنسی اے این آئی سے ایس کے سینی نے کہا کہ ہمیں کئی ان پٹ ملے ہیں کہ ہندوستان کے جنوبی علاقے اور جزیرہ نما علاقوں میں دہشت گردانہ حملہ ہوسکتا ہے، ہم نے کچھ لاوارث کشتیاں گجرات کے سرکریک سے برآمد کی ہیں ۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker