ہندوستان

بہار ہائی اسکول و ہائر سکینڈری اسکول اساتذہ کی تقرری کا نوٹیفکیشن جاری، نصاب میں شامل عربی وفارسی زبانیں غائب

پٹنہ۔ ۱۶؍ستمبر: (ابصارالدین) بہار حکومت کے جانب سے ہائی اسکول اور ہائیر سیکنڈری میں اساتذہ کی بحالی کے لیئے نوٹیفیکشن جاری کیا گیا اور اس میں عربی فارسی و میھتلی کو نہیں شامل کیا گیا جبکہ یہ تینوں زبانیں بہار اسکول بورڈ کے نصاب میں شامل ہے؛ لیکن بعد میں میتھلی کو شامل کیا گیا؛ حالانکہ عربی وفارسی زبان میٹرک اور انٹر کے امتحان کے لازمی گروپ میں شامل ہے؛ لیکن اس کے باوجود عربی وفارسی کے لیئے کوئ آسامیاں نہ نکالنا اور دوسرے مضامین کے لیئے ہزاروں آسامیاں نکالنا ان دونوں زبانوں کے ساتھ سوتیلا برتاؤ کیا جارہا ہے، گلوبلائزیشن کے اس دور میں ان زبانوں کی اہمیت اپنی جگہ مسلم ہے جس کی وجہ سے طلباء بہت جلد روزگار حاصل کرلیتے ہیں اور یہ گنگاجمنی تہزیب کی عکاس بھی اور اس کی آسامیاں نہ نکالنا کہیں نہ کہیں ملک کے مستقبل کی تعمیر میں رکاوٹ ہے ‛ جس کی وجہ سے طلبا میں شدید اضطراب ہے، افسوس کی بات یہ ہے کہ اس کے لئے عربی و فارسی زبان کی روٹی کھانے والے اس پر آواز بلند نہیں کر رہے ہیں، سوائے چند ایک کے. آبشارالدین کا کہنا ہے کہ اگر ان کی آسامیاں نہ نکالی گئ تو ہم اس لڑائ کو سڑک سے لے کر کورٹ تک لڑنے کے لیئے تیار ہیں اور اس لڑائ میں بائیں محاذ کی تمام طلباء تنظیمیں ہمارے ساتھ ہیں اور تمام تنظیمیں اور نامور یونیورسٹیاں کی جانب سے بہار بورڈ اور ایجوکیشن منیسٹر اور وزیر اعلی نتیش کمار کو خطوط ارسال کریں گے.

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker