ہندوستان

مودی سرکار ۸۰؍سالہ فاروق عبداللہ سے ڈر گئی؟ اویسی کا سوال

حیدرآباد۔ ۱۶؍ستمبر: پبلک سیکوریٹی ایکٹ کے تحت فاروق عبداللہ کی گرفتاری پر مجلس اتحادالمسلمین کے صدر اور حیدر آباد سے رکن پارلیمنٹ اسدالدین اویسی نے سوال اُٹھاتے ہوئے مودی سرکار پر نشانہ سادھا ہے ۔ انہوں نے کہاکہ پارلیمنٹ میں آرٹیکل ۳۷۰ بل کو لانے سے پہلے فاروق عبداللہ سے وزیر اعظم نریندر مودی نے بیٹھ کر ملاقات کی تھی جسے پوری دنیا نے دیکھا تھا، اب انہیں پی ایس اے ایکٹ کے تحت حراست میں کیسے رکھاجاسکتا ہے؟ وہ ملک کے لیے خطرہ کیسے ہوسکتے ہیں؟ جب وزیراعظم کو کسی سے خطرہ ہوگا تو وہ کیوں ان سے ملے؟ وہیں اس کے علاوہ وزیر داخلہ امیت شاہ نے پارلیمنٹ میں چیخ چیخ کر بتایا کہ نہ ان کو پکڑا گیا ہے اور نہ ہی حراست میں رکھاگیا ہے۔ اب وہ اس پر کیا کہیں گے۔ انہوں نے کہاکہ مسرت عالم ایک حریت لیڈر ہے وہیں فاروق عبداللہ سابق وزیر اعلیٰ ہیں تو آپ نے دونوں کو ملا دیا دونوں کو پی اے سی کے تحت نظر بند کیاگیا ہے۔ آپ کو ۸۰ سال کے شخص سے ڈر لگ رہا ہے؟ اس کا مطلب یہ ہے کہ کشمیر میں حالات درست نہیں ہیں، انہوں نے کہاکہ جب آپ نے ۸۰ سال کے سابق وزیر اعلیٰ کو پی ایس اے لگا رکھا ہے تو اس کا مطلب یہ ہے کہ کشمیر میں حالات پرامن نہیں ہیں آپ جو بول رہے ہیں وہ سراسر جھوٹ ہے۔ وزیر اعظم ایوان میں بل آنے سے پہلے ملتے ہیں اس وقت وہ ملک کے لیے خطرہ نہیں تھے اب وہ خطرہ ہوگئے۔ انہوں نے سوال کیا کہ کانگریس کے سینئر لیڈر غلام نبی آزاد کو جموں کشمیر جانے کےلیے حکومت سے اجازت کی ضرورت کیوں لینی پڑرہی ہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker