مسلم دنیا

عظیم مفکر مصطفٰی محمد الطحان انتقال کر گئے

 

نئی دہلی۔ ۲۷؍ ستمبر: مجتبیٰ فاروق کی اطلاع کے مطابق لبنان کے عظیم مفکر مصطفی محمد الطحان ۲۵؍ستمبر کو ۷۹ سال کی عمر میں انتقال کرگئے۔ ۔انا اللہ وانا الیہ راجعون۔مصطفیٰ محمد الطحان ایک عظیم مربی اور مفکر تھے ۔ وہ منفرد انداز سے سوچنے سمجھنے اور فیصلے لینے کی بھر پور صلاحیت رکھتے تھے۔دعوت و تربیت ان کا اصل میدان تھا۔موصوف 1940ء میں لبنان میں پیدا ہوئے۔ وہاں بچپن کا کچھ عرصہ گزرنے کے بعد شام کا رخ کیا اور وہیں ابتدائی و ثانوی تعلیم کے مراحل طے کئے ۔ اس کے بعد ترکی چلئے گئے جہاں سے انھوں نے کیمیکل انجینئرنگ میں ماسٹرس کی ڈگری حاصل کی ۔ انجینئرنگ ٹکنیکل تعلیم کا ایک ایسا شعبہ ہے جہاں سے بڑے بڑے داعی اور انسانی وسائل پیدا ہوئے ہیں اور پیدا ہو رہے ہیں۔نیز تحریکات اسلامی کو فکری رہنما بھی مل رہے ہیں جن میں نجم الدین اربکان ‛ خرم مراد اور سعادت اللہ حسینی بطور خاص قابل ذکر ہیں ۔مصطفی الطحان ایک عظیم اور ہر دلعزیز داعی اور زمانہ شناس مفکر تھے ۔انھوں نے تین میدانوں میں اچھا خاصا کام کیا ہے :1 دعوت و تربیت2 طلبہ تنظیموں کو مبلائز کرنا3 اسلامی لٹریچر کو دوسری زبانوں میں منتقل کرنا ۔ان کے نزدیک یہ تینوں اہم کام ہیں اسی وجہ سے ان پر توجہ دینے کی ضرورت ہے ۔ دینی تنظیموں اور اسلامی تحریکات کو طلبہ کی فکری اور عملی تربیت ترجیحی بنیادوں پر فوکس کرنا چائیے۔اسی لئے الطحان عمر بھر طلبہ تنظیموں کو سیراب کرتے رہے ۔انہیں طلبہ تنظیموں کا باوا مانا جاتا ہے ۔انھوں نے انٹرنیشنل اسلامی فیڈریشن فار اسٹوڈنٹس آرگنائزیشنز( IIFSO) ‛ورلڈ اسمبلی آف مسلم یوتھ (WAMY) اسٹوڈنٹس آرگنائزیشنس یونین (SOU) اور دیگر طلبہ تنظیموں کے قیام میں نمایاں کردار ادا کیا ہے ۔حضرت ابو بکر صدیق پہلے خلیفہ راشد، تاریخ الاخوان مصر ۱۹۲۸ ۔ ۲۰۰۵، رہنمائے طلبہ جیسی کتابیں منظر عام پر آکر مقبول خاص وعام ہوچکی ہیں۔

Sajid Qasmi

غفران ساجد قاسمی تعلیمی لیاقت : فاضل دارالعلوم دیوبند بانی چیف ایڈیٹر بصیرت آن لائن بانی چیف ایڈیٹر ہفت روزہ ملی بصیرت ممبئی بانی و صدر رابطہ صحافت اسلامی ہند بانی و صدر بصیرت فاؤنڈیشن

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker