ہندوستان

جہان آباد میں مورتی وسرجن کو لے کر فرقہ وارانہ تصادم

 

مذہبی مقامات نذرآتش، املاک تباہ، دفعہ ۱۴۴ نافذ

جہان آباد۔ ۱۰؍اکتوبر: بہار کے جہان آباد ضلع میں بدھ کے روز درگا مورتی وسرجن کو لے کر تنازعہ نے دو فرقوں کے درمیان خونی تصادم کا رنگ اختیار کرلیا۔ جس کے بعدپورے ضلع میں دفعہ ۱۴۴ نافذ ہے اور علاقے میں کشیدگی کا ماحول ہے۔ کشیدگی کے مدنظر پورے ضلع کو سیل کردیاگیا تھا اور مورتی وسرجن پر پابندی لگادی گئی تھی۔ ایس ڈی او کے حکم پر ضلع میں ۱۴۴ نافذ کردی گئی ہے، شہر میں پانچ لوگوں کے ایک ساتھ جمع ہونے پر پابندی عائد ہے ساتھ ہی اسلحے کے ساتھ چلنے پر بھی پابندی عائد ہے۔ ضلع میں کشیدگی کے درمیان اے ڈی جی لاء اینڈ آرڈر ریف اور ایس ٹی ایف کی ٹکڑیوں کے ساتھ جہان آباد پہنچے ہیں اور ان کے ساتھ گیا ضلع کے آئی جی بھی موجود تھے۔ نوادہ سے بی ایم پی ، ارول اور گیاسے بھی اضافی فورس تعینات کی گئی ہے۔ بدھ کی شب درگا موتی پر پتھرائو کا الزام لگاتے ہوئے وسرجن میں شامل لوگوں نے ہنگامہ آرائی کی اور ایک خاص فرقے کو نشانہ بناتے ہوئے ان پر پتھرائو کردیا اس کے ساتھ ہی ان کے مذہبی مقام کو بھی آگ کے حوالے کردیاگیا اس کے بعد دونوں فرقوں کے درمیان زبردست خونی تصادم ہوا جس میں کئی افراد شدید زخمی ہوگئے ۔ فساد کی اطلاع ملتے ہی جہان آباد کے ضلع افسر نوین کمار اور ایس پی منیش فورس کے ساتھ موقع واردات پر پہنچے اور بھیڑ کو منتشر کرنے کی کوشش کی۔ مشتعل بھیڑ کو منتشر کرنے کےلیے پولس کے ذریعے فائرنگ بھی کی گئی۔ فائرنگ کے بعد لوگ خاموش ہوئے لیکن پورے علاقے میں کشیدگی قائم ہے۔پٹنہ سے پولس کے ایڈیشنل ڈی جی اور گیا سے آئی جی وغیرہ موقع پر پہنچ کر حالات پر قابو پانے کےلیے سرگرم ہیں، پولس کی نفری اور رپیڈ ایکشن فورس آس پاس کے ضلعوں سے وہاں پہنچ گئی ہے۔ جانی نقصان کی فی الحال کوئی اطلاع نہیں ہے، دکانوں اور عمارات کے نقصان کےلیے معاوضہ دیاجائے گا۔ ڈی جی پی اور دیگر اعلیٰ سطحی حکام لگاتار حالات پر نظر رکھے ہوئے ہیں۔ وزیر اعلیٰ نے بھی ہدایت دی ہے کہ فوراً بلوائیوں کے خلاف سخت کارروائی کی جائے۔ پولیس ذرائع نے یہاں بتایاکہ غیر سماجی عناصر نے آج پنچ محلہ میں دوسرے فریق کے جلوس پر پتھراؤ کیا جس کے بعد لوگ مشتعل ہوگئے ۔ مشتعل لوگوں نے دس سے زائد دکانوںمیں آگ لگا دی ۔ اس دوران دونوں جانب سے پتھراؤ میں 20 سے زائد لوگ زخمی ہوگئے ۔ اس واقعہ کے بعد ارول موڑ ، فدا حسین روڈ ، گڑیریا کھنڈ اور راجا بازار علاقے میں کشیدگی کا ماحول ہے ۔ذرائع نے بتایاکہ واقعہ کی اطلاع ملتے ہی ضلع مجسٹریٹ اور سنیئر پولیس سپرنٹنڈنٹ موقع پر پہنچ گئے ہیں۔ علاقے میں کشیدگی کو دیکھتے ہوئے دفعہ ۔144 نافذکر دی گئی ہے ۔ اس کے ساتھ ہی کشیدگی والے علاقے میں فوری ٹاسک فورس ( آر اے ایف ) کے جوانوںکو تعینات کر دیا گیا ہے ۔دریں اثناءسنیئر پولیس سپرنٹنڈنٹ پنکج کمار نے بتایاکہ معاملہ پرسکون کرالیا گیاہے ۔ واقعہ کو قابو میں رکھنے کیلئے وافر تعداد میںپولیس دستوں کو حساس علاقوں میںتعینات کر دیا گیا ہے ۔ حالات اب پوری طرح سے قابو میں ہیں ۔ انہوںنے لوگوں سے کسی بھی طرح کی افواہ پر دھیان نہیں دینے کی اپیل کر تے ہوئے کہاکہ پورے شہر میںلگے سی سی ٹی وی کیمرے کی بنیاد پر بدمعاشوںکی شناخت کی جائے گی اور انہیں جیل بھیجا جائے گا۔

Sajid Qasmi

غفران ساجد قاسمی تعلیمی لیاقت : فاضل دارالعلوم دیوبند بانی چیف ایڈیٹر بصیرت آن لائن بانی چیف ایڈیٹر ہفت روزہ ملی بصیرت ممبئی بانی و صدر رابطہ صحافت اسلامی ہند بانی و صدر بصیرت فاؤنڈیشن

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker