اخبارجہاں

سلامتی کونسل کے اجلاس میں ترکی کو مشورہ، شام میں فوجی آپریشن روک دو، ترکی کا انکار

 

نیویارک ۔۱۱؍اکتوبر: ترکی اور سلامتی کونسل آمنے سامنے ، ایک طرف سلامتی کونسل قرارداد پر قراردادپیش کررہا ہے تو دوسری طرف ترکی اپنی سلامتی پر کسی قسم کی مصلحت کے شکار ہونے سے انکار کررہاہے، اطلاعات کے مطابق ترکی کی طرف سے شامی کرد باغیوں کیخلاف فوجی آپریشن کے حوالے سے اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کا ہنگامی اجلاس ہوا جس میں رکن ممالک نے ترکی سے شام میں جاری آپریشن روکنے کا مطالبہ کر دیا۔سلامتی کونسل کی طرف سے ترکی پر بے جادباو کا جواب ترکی نے بھی دیدہ دلیری پیش کیا، سلامتی کونسل کے جواب میں ترک صدر نے سخت الفاظ استعمال کرتے ہوئے کہا کہ کیا یہ ممالک جو سلامتی کونسل میں بیٹھ کر ترکی کو درس دے رہے ہیں ان کو نہیں پتہ ؟ کہ ترکی کے خلاف سازشیں کی جارہی ہیں‌اقوام متحدہ سیکریٹری جنرل انتونیو گوتریس نے بھی شام میں ترکی کے آپریشن پر گہری تشویش کا اظہار کیا ہے۔شام میں ترک فوجی کارروائی کے بعد اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کا بند کمرہ میں ہنگامی اجلاس ہوا۔اجلاس فرانس، جرمنی، برطانیہ، بیلجیئم اور پولینڈ کی درخواست پر طلب کیا گیا تھا۔اجلاس کے بعد سلامتی کونسل کے یورپی رکن ممالک فرانس، جرمنی، برطانیہ، بیلجیئم اور پولینڈ کی جانب سے جاری مشترکہ بیان میں شمالی شام میں ترک فورسز کے آپریشن پر گہری تشویش کا اظہار کیا گیا اور ترکی سے یکطرفہ آپریشن روکنے کا مطالبہ کیا گیا۔اجلاس میں امریکی سفیر برائے اقوام متحدہ کیلی کرافٹ نے ترکی کے آپریشن کی مذمت کی اور کہا ہے امریکہ نے شام میں ترک کارروائی کی کسی بھی طرح حمایت نہیں کی۔واضح رہے کہ ترکی اپنی سرحد سے متصل شام کے شمالی علاقے کو محفوظ بنا کر ترکی میں موجود کم و بیش 20 لاکھ شامی مہاجرین کو وہاں ٹھہراناچاہتا ہے۔

Sajid Qasmi

غفران ساجد قاسمی تعلیمی لیاقت : فاضل دارالعلوم دیوبند بانی چیف ایڈیٹر بصیرت آن لائن بانی چیف ایڈیٹر ہفت روزہ ملی بصیرت ممبئی بانی و صدر رابطہ صحافت اسلامی ہند بانی و صدر بصیرت فاؤنڈیشن

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker