ہندوستان

ہریانہ اسمبلی انتخابات : کانگریس کا انتخابی منشور جاری، ہجومی تشدد کے خلاف بنایا جائے گا سخت قانون

 

چنڈی گڑھ۔ ۱۱؍اکتوبر: ہریانہ اسمبلی انتخابات 2019 کے پیش نظر کانگریس نے اپنا انتخابی منشور جاری کردیا ہے ۔ کانگریس نے اپنے منشور میں کانگریس کی حکومت بننے پر ماب لنچنگ ( ہجومی تشدد ) پر ہریانہ میں سخت قانون بنائے جانے کی بات کہی ہے ۔ ہجومی تشدد کا جرم ثابت ہونے پر ملزمین کو سرکاری نوکریوں کیلئے نااہل قرار دیا جائے گا ۔ہریانہ میں کانگریس نے اپنے انتخابی منشور میں گائے سے پیار کا بھی مظاہرہ کیا ہے ۔ کانگریس کی حکومت بننے پر ہر اسمبلی حلقہ میں گئو شالہ کھولا جائے گا ۔ گئو شالاوں کو سالانہ بجٹ بھی دیا جائے گا ۔ گئو موتر اور گوبر کی پروسیسنگ کی جائے گی اور اس سے آیوروید دوائیں ، نامیاتی کھاد اور نامیاتی جراثیم کش ادویات تیار کرنے کیلئے ٹریننگ اور مالی مدد بھی دی جائے گی ۔ تاکہ گایوں کے توسط سے نوجوان روزگار حاصل کرسکیں ۔کانگریس کے انتخابی منشور کو لے کر سینئر لیڈر غلام نبی آزاد نے کہا کہ یہ ایک انقلابی منشور ہے ، جس میں سماج کے ہر طبقہ کا خیال رکھا گیا ہے ۔ اس منشور میں خواتین کا خاص خیال رکھا گیا ہے اور بچوں کی تعلیم اور سیکورٹی پر کافی توجہ دی گئی ہے ۔ 33 فیصدی ریزرویشن کا انتظام روزگار میں خواتین کیلئے کیا گیا ہے ۔ اگر بیوی کے نام پر گھر ہوگا تو ہاوس ٹیکس میں 50 فیصد کی چھوٹ دی جائے گی ۔ ایس سی – ایس ٹی طبقہ کی آگے کی پڑھائی اور ان کے روزگار کیلئے بھی بندوبست ، تعلیم میں اسکالر شپ وغیرہ کا بھی منشور میں اعلان کیا گیا ہے ۔

Sajid Qasmi

غفران ساجد قاسمی تعلیمی لیاقت : فاضل دارالعلوم دیوبند بانی چیف ایڈیٹر بصیرت آن لائن بانی چیف ایڈیٹر ہفت روزہ ملی بصیرت ممبئی بانی و صدر رابطہ صحافت اسلامی ہند بانی و صدر بصیرت فاؤنڈیشن

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker