ہندوستان

مرکزعلم ودانش علی گڑھ مسلم یونیورسٹی کی تعلیمی وثقافتی سرگرمیوں کی اہم خبریں

اے ایم یو کی صدی تقریبات کے سلسلہ میں صد سالہ لیکچر سیریز اور سوشل میڈیا کمیٹی کی تشکیل
علی گڑھ، 23؍اکتوبر: علی گڑھ مسلم یونیورسٹی (اے ایم یو)کے وائس چانسلر پروفیسر طارق منصور نے اے ایم یو کی صدی تقریبات کے سلسلہ میں صد سالہ لیکچر سیریز کے لئے ایک کمیٹی کی تشکیل کی ہے۔ وائس چانسلر کی سربراہی والی اس کمیٹی میں ڈاکٹر محمد شاہد (ڈپٹی ڈائرکٹر، سرسید اکیڈمی)، پروفیسر نجم الاسلام (بایو کیمسٹری شعبہ، فیکلٹی آف میڈیسن)، ڈاکٹر راحت ابرار (ڈائرکٹر، اردو اکیڈمی) اور پروفیسر شافع قدوائی (ممبر انچارج، رابطۂ عامہ) شامل ہیں۔
2020ء میں اے ایم یو کی صدسالہ تقریبات کے سلسلہ میں ایک آٹھ رکنی سوشل میڈیا کمیٹی کی بھی تشکیل کی گئی ہے ۔ پروفیسر محمد رضوان خاں (چیئرمین، شعبۂ انگریزی) اس کمیٹی کے چیئرمین اور ڈاکٹر فائزہ عباسی (اسسٹنٹ ڈائرکٹر، یوجی سی ایچ آرڈی سی) کنوینر ہیں، جب کہ اراکین میں پروفیسر سید علی ندیم رضاوی (چیئرمین، شعبۂ تاریخ)، پروفیسر محمد سجاد (شعبۂ تاریخ)، ڈاکٹر احمد فراز خاں (شعبۂ بزنس ایڈمنسٹریشن)، ڈاکٹر راحت ابرار (ڈائرکٹر، اردو اکیڈمی)، مسٹر عبداللہ زینی (شعبۂ ترسیل عامہ) اور مسٹر فیصل فرید (اسسٹنٹ کنٹرولر) شامل ہیں۔
٭٭٭٭٭٭
اے ایم یو کے اجمل خاں طبیہ کالج میں چار نئے موضوعات میں پی جی کورس کو منظوری
علی گڑھ، 23؍اکتوبر: علی گڑھ مسلم یونیورسٹی (اے ایم یو)کے اجمل خاں طبیہ کالج میںوزارتِ آیوش، حکومت ہند نے رواں تعلیمی سال 2019-20سے چار موضوعات میں پوسٹ گریجویٹ کورس شروع کرنے کی اجازت دے دی ہے۔
کالج کے پرنسپل پروفیسر سعود علی خاں نے یہ اطلاع دیتے ہوئے بتایا کہ علاج بالتدبیر، منافع الاعضاء، علم الصیدلہ اور امراضِ جِلد میں پی جی کورس میں چار چار سیٹوں پر داخلہ دینے کی اجازت موصول ہوئی ہے۔
انھوں نے اس حصولیابی کے لئے وائس چانسلر پروفیسر طارق منصور اور رجسٹرار مسٹر عبدالحمید آئی پی ایس کا بطور خاص شکریہ ادا کیا۔ وائس چانسلر پروفیسر طارق منصور نے بھی پرنسپل پروفیسر سعود علی خاں کی کاوشوں کی ستائش کرتے ہوئے اسے ان کی مدتِ کار کی ایک بڑی حصولیابی قرار دیا۔
پروفیسر سعود علی خاں نے بتایا کہ مذکورہ بالا چار موضوعات میں داخلہ کی اجازت کے ساتھ ہی اجمل خاں طبیہ کالج میں دس نئے اور پرانے پی جی کورسوں میں مجموعی طور سے 32؍سیٹیں ہوگئی ہیں۔ نئے کورسوں کے اضافہ سے کالج کے طلبہ و طالبات میں خوشی کا ماحول ہے۔ متعدد اساتذہ اور بہی خواہوں نے پروفیسر سعود علی خاں کو مبارکباد پیش کی۔
٭٭٭٭٭٭
قرآنک اسٹڈیز فورم کے زیر اہتمام پروفیسر عبدالرحیم قدوائی کا لیکچر
علی گڑھ، 23؍اکتوبر: خلیق احمد نظامی سنٹر فار قرآنک اسٹڈیز، علی گڑھ مسلم یونیورسٹی (اے ایم یو)کے قرآنک اسٹڈیز فورم کے زیر اہتمام سنٹر کے ڈائرکٹر پروفیسر عبدالرحیم قدوائی نے ’قرآن مجید میں صنفی مساوات‘ کے موضوع پر خطبہ دیا۔
انھوں نے متعدد قرآنی آیات کا حوالہ دیتے ہوئے کہاکہ قرآن مجید میں کسی بھی پہلو سے عورتوں کے خلاف امتیاز کی بات نہیں ہے ، بلکہ انسانی زندگی کے مختلف شعبوں میںان کی مساوی اور سرگرم شرکت پر زور دیا گیاہے۔
پروفیسر قدوائی نے کچھ مثالی خواتین کا بھی حوالہ دیا جن کا ذکر قرآن مجید میں ہے ۔ انھوں نے حضرت مریم کا بطور خاص ذکر کرتے ہوئے کہاکہ قرآن مجید کو مردوں پر مرکوز کتاب سمجھنا سراسر غلط ہے۔
یونیورسٹی کے مختلف شعبوں کے اساتذہ، ریسرچ اسکالرس، بی اے (قرآنک اسٹڈیز) کے طلبہ و طالبات جن میں ویمنس کالج کی طالبات بھی شامل تھیں، اس لیکچر میں شریک ہوئے۔ قرآنک اسٹڈیز فورم کے کنوینر مسٹر گوہر قادر وانی نے نظامت کے فرائض انجام دئے۔
٭٭٭٭٭٭
عالمی دماغی یومِ صحت پر ہوئے پوسٹرسازی مقابلہ کے فاتحین و شرکاء کو سرٹیفیکٹ تقسیم
علی گڑھ، 23؍اکتوبر: عالمی دماغی یومِ صحت کے موقع پر علی گڑھ مسلم یونیورسٹی (اے ایم یو)کے دیہی صحت تربیتی مرکز (آر ایچ ٹی سی)، جواں میں منعقدہ پوسٹر سازی مقابلے کے شرکاء اور فاتحین کو سرٹیفیکٹ تقسیم کئے گئے۔ مقابلہ کا اہتمام جواہر لعل نہرو میڈیکل کالج کے دماغی امراض اور کمیونٹی میڈیسن شعبوں کے اشتراک سے کیا گیا تھا۔
اس میں ڈاکٹر سمن حبیب، ڈاکٹر ساکشی اور ڈاکٹر رونق کو دماغی امراض شعبہ کے قائم مقام چیئرمین پروفیسر ایس اے اعظمی ، ڈاکٹر عظمیٰ ارم (انچارج، آر ایچ ٹی سی) اور ڈاکٹر حشمت علی نے بالترتیب اوّل، دوئم اور سوئم انعام سے نوازا۔ دیگر شرکاء کو بھی انھوں نے سرٹیفیکٹ تقسیم کئے۔ ڈاکٹر عظمیٰ ارم نے اظہار تشکر کیا۔ اس موقع پر سینئر ریزیڈنٹ ڈاکٹر شرون کمار، جونیئر ریزیڈنٹ ڈاکٹر احسن، ڈاکٹر ثمینہ، ڈاکٹر تزئین، ڈاکٹر جعفر، ڈاکٹر کارتیکا، ڈاکٹر امبیکا، انٹرن سیف بیگ، میڈیکل سوشل ورکر مسٹر مناور احمد اور دیگر افراد موجود تھے۔
٭٭٭٭٭٭
اے ایم یو میں تین روزہ نیشنل کارٹون ورکشاپ کا آغاز
علی گڑھ، 23؍اکتوبر: علی گڑھ مسلم یونیورسٹی (اے ایم یو)کی معین الدین آرٹ گیلری میں آج بروز منگل تین روزہ نیشنل کارٹون ورکشاپ کا آغاز ہوا جس کا افتتاح کالی کٹ یونیورسٹی کی سابق وائس چانسلر پروفیسر انور جہاں زبیری نے کیا۔اس موقع پر بابائے قوم مہاتما گاندھی کے 150ویں یوم پیدائش کی مناسبت سے مہاتما گاندھی پر کارٹونوں اور اسکیچ کی ایک نمائش بھی لگائی گئی ہے۔
ورکشاپ کا اہتمام اے ایم یو کے جدید ہندوستانی زبانوں کے شعبہ کے ملیالم سیکشن کے ادبی و تحقیقی فورم ’ملیالم سرگاودی‘ نے کیرالہ کارٹون اکیڈمی اور معین الدین آرٹ گیلری کے اشتراک سے کیا ہے، جس کا اختتام 25؍اکتوبر کو ہوگا۔
پروگرام کا آغازآرٹ گیلری کی کوآرڈنیٹر پروفیسر بدر جہاں کے خطبۂ استقبالیہ سے ہوا۔ نامور مزاحیہ و طنزیہ کارٹونسٹ مسٹر سُدھیر ناتھ نے کلیدی خطبہ پیش کیا جب کہ پروفیسر مسعود انور علوی (ڈین، فیکلٹی آف آرٹس) نے صدارتی خطبہ دیا۔ مسٹر ای سریش (کارٹونسٹ، وکٹر چینل، کیرالہ) نے بھی اظہار خیال کیا۔ پروگرام کے اختتام پر پروفیسر ٹی این ستھیسن نے اظہار تشکر کیا۔ ورکشاپ میں مسٹر سدھیر ناتھ نے شرکاء کو بتایا کہ کس طرح تخلیقی صلاحیت کا استعمال کرکے کارٹون تیار کیا جاتا ہے۔ اس موقع پر مختلف شعبوں کے اساتذہ اور طلبہ و طالبات موجود تھے۔
٭٭٭٭٭٭
ویمنس کالج میں کل ہند مشاعرہ 25؍اکتوبر کو
علی گڑھ، 23؍اکتوبر: علی گڑھ مسلم یونیورسٹی (اے ایم یو) کے ویمنس کالج میں حسب روایت اس سال بھی 25؍اکتوبر کو شام 6:30 بجے کل ہند مشاعرہ کا انعقاد کیا جارہا ہے۔ مشاعرہ کی سرپرستی اے ایم یو کے پرو چانسلر جناب ابن سعید خاں آف چھتاری فرمائیں گے، جب کہ مہمان خصوصی کے طور پر پرو وائس چانسلر پروفیسر اختر حسیب شریک ہوں گے۔
مشاعرہ کی صدارت اظہر عنایتی کریں گے، جب کہ نظامت کے فرائض کنوینر مشاعرہ ڈاکٹر سرور ساجد اور ڈاکٹر شارق عقیل انجام دیں گے۔ شرکت کرنے والے شعراء میں مسٹر عبید صدیقی، فرحت احساس، سلمیٰ شاہین، پروفیسر شہپر رسول، عذرا نقوی، پاپولر میرٹھی شامل ہیں۔
٭٭٭٭٭٭
ڈاکٹر عبید اے صدیقی نے ایمس میں منعقدہ ورکشاپ میں بطور ریسورس پرسن شرکت کی
علی گڑھ، 23؍اکتوبر: جواہر لعل نہرو میڈیکل کالج ، علی گڑھ مسلم یونیورسٹی (اے ایم یو) کے انستھیسیالوجی اینڈ کریٹیکل کیئر شعبہ کے اسسٹنٹ پروفیسر ڈاکٹر عبید اے صدیقی نے ایمس ، نئی دہلی میں منعقدہ ایئر وے ورکشاپ میں بطور ریسورس پرسن شرکت کی اور شریک ڈاکٹروں کو ایئروے مینجمنٹ کی مختلف تکنیکوں کی عملی جانکاری فراہم کی۔ اس ورکشاپ کا انعقاد ایمس میں ’نیورو انستھیسیا نیورو کریٹیکل کیئر اپڈیٹ-2019‘ کے موقع پر کیا گیا تھا۔
٭٭٭٭٭٭
اے ایم یو کے سنٹروں اور دیگر اداروں میں بانیٔ درسگاہ کو شایان شان خراج عقیدت پیش کیا گیا
علی گڑھ، 23؍اکتوبر: علی گڑھ مسلم یونیورسٹی (اے ایم یو) کے مراکز اور مختلف اقامتی ہالوں اور اداروں میں یومِ سرسید پر مختلف پروگراموں کا انعقاد کیا گیا۔
اے ایم یو کے ملاپورم سنٹر پر جشن یومِ سرسید سے خطاب کرتے ہوئے ڈاکٹر عمر تسنیم (کالی کٹ یونیورسٹی) نے کہاکہ سرسید احمد خاں پہلے ہندوستانی مسلمان تھے جنھوں نے سائنسی تعلیم و ترقی کے لئے آواز بلند کی اور مسلم سماج کو اندھیرے سے روشنی کی طرف لانے میں مرکزی کردار ادا کیا۔
ڈاکٹر تسنیم نے کہا ’’سرسید نے ہر طرح کی مشکلات پر قابو پایا اور اصلاحی و تعلیمی تحریک شروع کرنے کے ساتھ ہی ایک اعلیٰ معیار کا تعلیمی ادارہ قائم کیا۔ اے ایم یو صرف ایک ادارہ نہیں ہے بلکہ تعلیم کے ذریعہ امتیاز حاصل کرنے کی ایک عالمی تحریک ہے۔ سرسید نے سماج کو پیشہ ورانہ امتیاز حاصل کرنے اور رہنما پیدا کرنے کا پیغام دیا‘‘۔
اس سے قبل مہمانوں کا خیرمقدم کرتے ہوئے ڈاکٹر فیصل کے پی (ڈائرکٹر، ملاپورم سنٹر) نے کہاکہ اے ایم یو نے کیرالہ، مغربی بنگال اور بہار میں سنٹر قائم کرکے سرسید کے ایک خواب کو عملی جامہ پہنایا۔ انھوں نے مذکورہ مراکز کی ترقی کے لئے اے ایم یو برادری کو ساتھ آنے پر زور دیا۔
اے ایم یو کے سابق طالب علم ایڈوکیٹ معیدین پی سی، ڈاکٹر وی یو سیتھی، مسٹر عادل عزیز سمیت مسٹر خضر ضمیر (سینئر ہال، بوائز) اور مس دیبا فاطمہ (سینئر ہال، گرلس) نے بھی اظہار خیال کیا۔ اس موقع پر متعدد ثقافتی و علمی مقابلوں کے فاتحین کو انعامات تقسیم کئے گئے۔
اے ایم یو کے مرشدآباد اور کشن گنج کے سنٹروں پر بھی تقریبات کا انعقاد کرکے بانیٔ درسگاہ سرسید احمد خاں کو خراج عقیدت پیش کیا گیا۔
یونیورسٹی کے بیگم عزیز النساء ہال میں منعقدہ جشن یومِ سرسید میں نامور ماہر امراض اطفال ڈاکٹر حمیدہ طارق نے بطور مہمان خصوصی اور پروفیسر سیدہ نزہت زیبا اور پروفیسر سیمیں حسن نے بطور مہمان اعزازی شرکت کی۔
وائس چانسلر پروفیسر طارق منصور نے اس موقع پر بانیٔ درسگاہ سرسید احمد خاں کی والدہ بیگم عزیز النساء کا بطور خاص ذکر کیا، جن کا سرسید کی تربیت میں اہم رول رہا۔ انھوں نے امید ظاہر کی کہ نوتعمیر بیگم عزیز النساء ہال طالبات کے لئے ایک مثالی اقامتی ہال بنے گا۔
ڈاکٹر حمیدہ طارق نے سرسید کی زندگی کے مختلف واقعات بیان کرتے ہوئے اساتذہ اور طلبہ و طالبات کو تلقین کی کہ وہ بانیٔ درسگاہ کے خوابوں کی تکمیل میں مددگار بنیں۔
پروفیسر سیمیں حسن نے سرسید کی والدہ کو بھرپور خراج تحسین پیش کیا، جب کہ پروفیسر سیدہ نزہت زیبا نے کہاکہ سرسید مشکل حالات میں امید کی کرن بن کر سامنے آئے اور مضمحل سماج کے لئے مسیحا ثابت ہوئے۔ انھوں نے طالبات سے کہاکہ وہ دستیاب وسائل کو اپنی بہتری کے لئے استعمال کریں۔
اس سے قبل اقامتی ہال کی پرووسٹ پروفیسر صبوحی خاں نے مہمانوں کا خیرمقدم کیا اور ہال کی سرگرمیوں پر روشنی ڈالی۔
اس موقع پر مختلف ثقافتی و ادبی مقابلوں کے فاتحین کو انعامات تقسیم کئے گئے۔ کلچرل سکریٹری مس نغمہ شمیم نے سرسید کے ایک پورٹریٹ کی نمائش کی، جو انھوں نے خود تیار کی تھی۔ وارڈن انچارج مس علیشا ابکار نے پروگرام کا انتظام و انصرام سنبھالا جب کہ جوائنٹ ہال مانیٹر مس فبیہہ احمد اور سینئر لٹریری مانیٹر مس یسریٰ خان نے نظامت کے فرائض انجام دئے۔ جنرل وارڈن ڈاکٹر غزالہ یاسمین نے اظہار تشکر کیا۔
٭٭٭٭٭٭
بی ٹیک کے تین طلبہ کو ستیندر کمار کشیپ میرٹ اسکالرشپ سے نوازا گیا
علی گڑھ، 23؍اکتوبر: علی گڑھ مسلم یونیورسٹی (اے ایم یو) کے بی ٹیک (مکینیکل انجینئرنگ) کے طالب علم محمد فرحان خان، مشرف خان اور احمد فراز بدر کو علی گڑھ ایجوکیشن اِنڈومنٹ فنڈ امریکہ- ستیندر کمار کشیپ میرٹ اسکالرشپ سے نوازا گیا ہے۔ انھیں یہ اسکالر شپ اے ایم یو کے سابق طالب علم امریکہ نشیں ڈاکٹر شہیر خان اور الومنائی افیئرس کمیٹی کے چیئرمین پروفیسر ایم ایم سفیان بیگ کے بدست پیش کی گئی۔
ڈاکٹر شہیر خان نے بتایا کہ ستیندر کمار کشیپ میرٹ اسکالرشپ ، مس دیپالی کشیپ نے اپنے والد مسٹر ستیندر کمار کشیپ کی یاد میں شروع کی ہے ۔انھوں نے کہاکہ علی گڑھ ایجوکیشن اِنڈومنٹ فنڈ ایک فلاحی تنظیم ہے جس کو امریکہ میں اے ایم یو کے سابق طلبہ اور بہی خواہوں نے ہندوستان میں مستحق طبقات کی تعلیمی ضروریات کے لئے قائم کیا ہے۔ یہ تنظیم کئی تعلیمی پروجیکٹوں کو مالی امداد فراہم کررہی ہے۔
اس موقع پر پروفیسر ایم ایم سفیان بیگ نے ہونہار طلبہ و طالبات کی مدد کے لئے الومنائی گروپ کی نیک کاوشوں کی ستائش کی۔
٭٭٭٭٭٭
پروفیسر محمد جہانگیر وارثی میڈیا اینڈ انٹر ٹینمنٹ ریسرچ فاؤنڈیشن کے گراں قدر اعزاز’’ گوہرِ ادب ایوارڈ‘‘سے سرفراز
علی گڑھ، 23؍اکتوبر: علی گڑھ مسلم یونیورسٹی (اے ایم یو)کے شعبۂ لسانیات کے سربراہ پروفیسر محمد جہانگیر وارثی کو میڈیا اینڈ انٹر ٹینمنٹ ریسرچ فاؤنڈیشن (ایم ای آر ایف) نے اپنے گراں قدر اعزاز’’ گوہرِ ادب ایوارڈ‘‘ سے سرفراز کیا ہے۔
پروفیسر وارثی کو یہ اعزاز ان کی بیش قیمتی علمی خدمات کے اعتراف میں غالب انسٹی ٹیوٹ، نئی دہلی میں منعقدہ ایک خصوصی تقریب کے دوران تفویض کیا گیا ۔

Tags

Sajid Qasmi

غفران ساجد قاسمی تعلیمی لیاقت : فاضل دارالعلوم دیوبند بانی چیف ایڈیٹر بصیرت آن لائن بانی چیف ایڈیٹر ہفت روزہ ملی بصیرت ممبئی بانی و صدر رابطہ صحافت اسلامی ہند بانی و صدر بصیرت فاؤنڈیشن

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker