ہندوستان

اپنی زندگی کا ہر لمحہ سیرت نبوی کے مطابق گذاریں، سوپول میں خصوصی تربیتی اجلاس کے دوسرے اور تیسرے سیشن سے مولانا سید محمد ولی رحمانی کا خطاب

 

سوپول۔ ۵؍نومبر: سوپول میں نقباء، نائبین نقباء امارت شرعیہ ، علماء و ذمہ داران مدارس ، ارکان شوریٰ و عاملہ امارت شرعیہ ، ارباب حل و عقد، ائمہ کرام و دانشوران کے خصوصی دو روزہ تربیتی اجلاس کا دوسرا سیشن جامع مسجد مرکزوالی سوپول میں ۴؍ نومبر کو بعد نماز مغرب شروع ہوا۔ پروگرام کا آغاز حسب روایت تلاوت کلام پاک سے ہوا ۔ اپنے صدارتی خطاب میں امیر شریعت مفکر اسلا م حضرت مولانا محمد ولی رحمانی صاحب نے تمام نقباء امارت شرعیہ اور علاقے کے نمائندگان سے مخاطب ہو کر کہا کہ آپ سب حضرات امارت شرعیہ کا حصہ ہیں ، امارت شرعیہ کا وجود آپ سب سے ہے ، آپ سب لوگوں کی ذمہ داری ہے کہ امار ت شرعیہ کو مضبوط کریں ، امارت شرعیہ کو مضبوط کرنے کا طریقہ یہ نہیں ہے کہ جب مبلغ اور سفیر آپ کے پاس پہونچیں تو آپ چندہ دے دیں ، بلکہ اصل مضبوط کرنے کا طریقہ یہ ہے کہ آپ امارت شرعیہ کے لیے اپنا وقت ،ہمت ، حوصلہ اور جذبہ خرچ کریں ، ملت کے لیے امارت شرعیہ کی جو فکر ہے اسکو اپنی فکر بنائیں ، ملت کی حالت اسی وقت ٹھیک ہو گی جب سب مل کر کام کریں ، جس میں جو صلاحیت ہو وہ ملت کے لیے لگائے ۔ملت کے کاموں کے لیے وقت لگانا ہو گا ، اس میں جی جان سے لگنا ہو گا تبھی قو م و ملت کی ترقی ہو گی ۔امار ت شرعیہ صرف امیر شریعت ، ناظم ، قاضی ، مفتی اور دوسرے ذمہ داروں کا نام نہیں ہے بلکہ آپ کا ہر شخص امارت شرعیہ کا حصہ ہے ، جتنی ذمہ داری امیر شریعت اور ناظم کی ہے اتنی ہی ذمہ داری آپ کی ہے ، آپ کی بنیاد پر ہی امارت شرعیہ کی عمارت کھڑی ہے ۔ حضرت امیر شریعت نے فرمایا کہ امارت شرعیہ کا نمائندہ ہو نے کا مطلب یہ ہے کہ آپ کی زندگی شریعت کا آئنہ دار ہو ، آپ کی زندگی کا ہر لمحہ شریعت اسلامی اور سیرت نبوی صلی اللہ علیہ وسلم کے مطابق گذرنی چاہئے ۔آپ نے لوگوں کو اپنا محاسبہ کرے کی تلقین کی ، آپ نے فرما یا کہ امارت شرعیہ وہی چاہتی ہے جو شریعت چاہتی ہے ، اللہ کے نبی صلی اللہ علیہ وسلم نے جو پیغام دیا وہی امارت شرعیہ کا پیغام ہے ۔آپ نے فرمایا کہ سیرت کی جو بات سنیے اس پر عمل بھی کیجئے ، اپنی اولاد کی صحیح تربیت کیجئے ، ان کو دین کا علم سکھائیے ۔ آ پ نے موجود ہ حالات پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ یقینا حالات برے ہیں اور مشکل ہیں ، لیکن مشکل حالات سے نکلنے کا سب سے ضروری نسخہ یہ ہے کہ اللہ سے اپنے رابطہ کو مضبوط کیجئے اگر ہم اللہ کویاد کرتے ہیں تو اللہ بھی اپنے بندوں کو چھوڑنے والا نہیں ہے ، آپ نے فرمایا کہ روزانہ ایک سو مرتبہ’’ استغفر اللہ من کل ذنب وا توب علیہ ‘‘ اور پانچ سو مرتبہ ’’لا حول و لا قوۃ الا باللہ العلی العظیم‘‘ کا ورد کیجئے ، ان شاء اللہ اس کی برکت سے اللہ تعالیٰ مشکل حالات سے نکالے گا۔ اس سے قبل مولانا مفتی محمد سہراب ندوی صاحب نے ابتدائی خطاب کرتے ہوئے امار ت شرعیہ کی جانب سے مقرر کردہ نقباء کی ۱۴؍ نکات پر مشتمل ذمہ داریوں کو تفصیل سے بیان کیا ، خاص طور پر آپ نے نقباء کو اصلاح معاشرہ ، علاقہ میں دینی تعلیم کی ترویج و اشاعت، مکاتب کے قیام ، مسجد میں نکاح کرنے ، شادی کے غلط رسوم و رواج سے بچنے اور اپنے اور اپنے بال بچوں کی شادی میں جہیز نہ لینے کی تلقین کی ،آپ نے معاشی اعتبار ے مضبوط ہونے کے لیے تجارت اور صنعت و حرفت اختیار کرنے کی طرف بھی توجہ دلائی ۔جناب مفتی محمد ثناء الہدیٰ قاسمی نے ماہ ربیع الاول کے تعلق سے سیرت نبوی صلی اللہ علیہ وسلم کو اپنے خطاب کا موضوع بنایا ، آپ نے لوگوں سے اپیل کی کہ اس ماہ میں ہر شخص سیرت نبوی سے متعلق کم از کم ایک کتاب کا بالاستیعاب مطالعہ ضرور کرے ، آپ نے لوگوں سے اپیل کی کثرت سے درود شریف کا اہتمام کریں ، آپ نے فرمایا کہ حضور اکرم صلی اللہ علیہ وسلم کے اخلاقی اقدار کو اپنی انفرادی اور اجتماعی زندگی میں داخل کیجئے اور اپنی زندگی کو نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم کی سیرت کا نمونہ بنائیے ۔ آپ نے اپنے اندر داعیانہ اوصاف و کردار پیدا کرنے کی بھی تلقین کی ۔مولانا مفتی نذر توحید مظاہری نے مسلمان ہونے کی حیثیت سے ہماری کیا ذمہ داریاں ہیں ان پر روشنی ڈالی ، آپ نے فرمایا کہ پیدائش سے لے کر موت تک زندگی کے ہرلمحہ میں شریعت اسلامی اور سیرت نبوی کو ملحوظ رکھیں۔ آپ نے اولاد کو دین کی تعلیم دینے اور قرآن پڑھانے کی بھی تلقین کی۔آخر میں حضرت امیر شریعت مد ظلہ کی دعا پر دوسری نشست کا اختتام ہوا۔

Sajid Qasmi

غفران ساجد قاسمی تعلیمی لیاقت : فاضل دارالعلوم دیوبند بانی چیف ایڈیٹر بصیرت آن لائن بانی چیف ایڈیٹر ہفت روزہ ملی بصیرت ممبئی بانی و صدر رابطہ صحافت اسلامی ہند بانی و صدر بصیرت فاؤنڈیشن

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker