ہندوستان

دارالعلوم وقف دیوبندکے استاذ حدیث مولانا غلام نبی کشمیری کا طویل علالت کے بعد انتقال، نمازِ جنازہ آج بعد نماز عشاء احاطہ مولسری میں

دیوبند: ٧نومبر – دارالعلوم وقف دیوبند کے قدیم ترین استاذ اور ماہنامہ ندائے دارالعلوم کے ایڈیٹرمولانا غلام نبی کشمیری کا آج صبح ساڑھے چھ بجے دہلی کے ہسپتال میں طویل علالت کے بعد انتقال ہوگیا۔مرحوم گزشتہ کافی عرصے سے شدید بیمار تھے اور زیرعلاج تھے۔واضح رہے کہ مولانا مرحوم دارالعلوم دیوبند کے ایک ممتاز فاضل اور دارالعلوم وقف کے جید اور کامیاب ترین اساتذہ میں شمار ہوتے تھے۔ مولانا مرحوم  فن حدیث و فقہ کے امام تھے-  انہیں درس و تدریس کے علاوہ خطابت و تحریر پر بھی یکساں عبور حاصل تھاچنانچہ جہاں چار دہائی سے زائد دارالعلوم وقف میں تدریسی خدمات انجام دیں وہیں اس ادارے سے شائع ہونے والے ماہانہ مجلہ کی ادارت بھی کرتے رہے،اس کے علاوہ انہوں نے متعدد کتابیں بھی تصنیف کیں، اور کئی درسی کتابوں کے بہترین شارح تھے، جن میں مجموعہ اور عربی شعر و ادب کی مشہور کتاب دیوان متنبی کی شرح قابل ذکر ہیں۔ اسکے علاوہ حضرت کے ہزاروں شاگرد ہیں جو انکے لئے صدقہء جاریہ ہیں، انہوں نے ندائے دارالعلوم میں بانی دارالعلوم دیوبند مولانا محمد قاسم نانوتوی کی تصانیف کی تسہیل و توضیح کا بھی اچھا سلسلہ شروع کیاتھا، ان کی مشہور کتاب’’تقریردلپذیر‘‘کی روشنی میں مولاناکے افکار و علوم کی تشریح کررہے تھے،جس کی اب تک۴۷قسطیں شائع ہوچکی ہیں۔مولاناخالص علمی آدمی تھے، نیک دل مخلص متقی، پرہیزگار تھے ،شستہ و شگفتہ اخلاق کے حامل تھے،طلبہ و علمامیں انھیں یکساں مقبولیت حاصل تھی۔درمیان میں کچھ عرصہ انہوں نے دیوبند کے ایک دوسرے ادارے دارالعلوم زکریامیں بھی تدریسی خدمت انجام دی تھی اور جب سے طبیعت زیادہ علیل ہوئی تھی تو کشمیر کے مدرسہ ضیاء العلوم میں تدریس حدیث کی خدمت انجام دے رہے تھے۔مرحوم کی نماز جنازہ آج بعد نمازعشادارالعلوم دیوبند کے احاطۂ مولسری میں اداکی جائے گی۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker