ہندوستان

سابق وزیر روشن بیگ کو جھٹکا، بی جے پی میں نہیں ہو پائی شمولیت

 

بنگلورو۔ ۱۴؍نومبر: کرناٹک کے سابق ریاستی وزیر آر روشن بیگ کو آج اس وقت شدید جھٹکا لگا جب کرناٹک اسمبلی کے نااہل قرار دئیے گئے کانگریس اور جے ڈی (ایس) کے کل 17 میں سے 16 ارکان اسمبلی نے بھارتیہ جنتا پارٹی میں شمولیت اختیار کر لی اور انہیں بی جے پی میں شامل نہیں کیا گیا۔ بنگلورو میں پارٹی کے دفتر میں منعقدہ ایک تقریب کے دوران شیواجی نگر کے سابق کانگریس لیڈر اور سابق ایم ایل اے روشن بیگ کو چھوڑ کر تمام نااہل قرار دئیے گئے ارکان اسمبلی کو بی جے پی میں شامل کر لیا گیا۔ آر آر نگر اور مسکی انتخابی حلقوں کو چھوڑ کر اگلے ماہ دسمبر میں پندرہ حلقوں میں ضمنی اسمبلی انتخابات ہوں گے۔بتا دیں کہ اس سے پہلے کل بدھ کے روز سپریم کورٹ نے اپنے ایک فیصلے میں کرناٹک کے ان 17 باغی ممبران اسمبلی کو نااہل قرار دیئے جانے والے فیصلے کو جائز ٹھہرایا تھا، لیکن انہیں اسمبلی کے ضمنی انتخابات لڑنے کی اجازت دے دی تھی۔ جسٹس این وی رمن کی صدارت والی تین رکنی بنچ نے باغی ممبران اسمبلی کی درخواستوں کی سماعت کرتے ہوئے کہا تھا کہ اس وقت اسمبلی اسپیکر کے رمیش کمار کی طرف سے باغی ممبران اسمبلی کو نااہل ٹھہرانے کا فیصلہ درست تھا۔ تاہم،عدالت نے واضح کیا کہ پوری مدت کے لئے نااہل ٹھہرانے کا اسپیکر کا فیصلہ مناسب نہیں تھا۔ان اراکین اسمبلی کو نااہل قرار دئیے جانے سے جولائی میں کرناٹک میں بی جے پی کے لئے حکومت بنانے کی راہ ہموار ہو گئی تھی۔ بدھ کے روز سپریم کورٹ نے ان ممبران اسمبلی کو نااہل قرار دئیے جانے والے فیصلے کو برقرار رکھا لیکن انہیں ضمنی انتخابات میں حصہ لینے کی اجازت دے دی۔بی جے پی نے ایک دیگر نااہل قرار دئیے گئے رکن اسمبلی روشن بیگ کو آج اپنی پارٹی میں شامل نہیں کیا۔ بنگلورو میں بی جے پی کے وزیر اعلیٰ یدی یورپا نے میڈیا اہلکاروں کو بتایا کہ روشن بیگ کے سلسلہ میں بات چیت جاری ہے اور پارٹی میں ان کی شمولیت کو لے کر ابھی کوئی فیصلہ نہیں کیا گیا ہے۔ روشن بیگ سات بار کے رکن اسمبلی اور کانگریس حکومت میں سابق وزیر رہے ہیں۔کانگریس نے روشن بیگ کو ان کی پارٹی مخالف سرگرمیوں کے الزام میں 19 جون کو معطل کردیا تھا۔ روشن بیگ پر الزام تھا کہ انہوں نے کانگریس کے ریاستی لیڈروں کے خلاف نازیبا الفاظ استعمال کئے تھےاور پارٹی مخالف سرگرمیوں میں ملوث تھے۔

Sajid Qasmi

غفران ساجد قاسمی تعلیمی لیاقت : فاضل دارالعلوم دیوبند بانی چیف ایڈیٹر بصیرت آن لائن بانی چیف ایڈیٹر ہفت روزہ ملی بصیرت ممبئی بانی و صدر رابطہ صحافت اسلامی ہند بانی و صدر بصیرت فاؤنڈیشن

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker