ہندوستان

لقوہ کا شکار پچیس سالہ نوجوان کو ڈاکٹردلشاد نے نئی زندگی دی

۴؍ماہ کے کامیاب تجربے کے بعد نوجوان اپنے پائوں پر چلنے کے قابل ہوگیا

دربھنگہ۔ ۱۵؍نومبر: (رفیع ساگر) ریڑھ کی ہڈی میں ٹی بی ( پوٹس اسپائن) ہوجانے کے سبب پاوں کے لقوے کا شکار ہوکر بستر کو ہی اپنی زندگی سمجھنے والے ایک 25 سالہ نوجوان کو جدید ترین طریقہ علاج کا استعمال کرکے ماہر ہڈی امراض ڈاکٹر دلشاد انور نے نئی زندگی دی ہے۔4 ماہ کے کامیاب تجربے کے بعد اب نوجوان آسانی سے چل کر ڈاکٹروں کے لئے ایک نظیر بن گیا ہے۔فالج کے بعد وہ مریض دونوں پاوں سے معذور ہوگیا تھا۔شہر کے متعدد ہڈی امراض کے ڈاکٹروں نے ڈاکٹر دلشاد انور کی کامیابی کو میڈیکل کے میدان میں اہم قدم قرار دیا ہے اور اس کی ستائش کی۔معاشی طور پر انتہائی غریب دربھنگہ کے صدر بلاک کے پورا گاوں رہائشی محمد جہانگیر پوٹس اسپائن کی بیماری کے بعد اپنی باقیہ زندگی سے مایوس ہوگیا تھا۔وہ اپنی علاج پر لاکھوں روپیے خرچ کر چکا تھا لیکن انہیں کوئی فائدہ نہیں مل رہا تھا۔وہ بستر پر ہی پاخانہ پیشاب کرتا تھا جس سے اس کی زندگی اجیرن بن گئی تھی۔جب چلنے پھرنے سے پوری طرح معذور محمد جہانگیر کو کسی ذرائع سے ماہر ہڈی امراض ڈاکٹر دلشاد انور سے متعلق جانکاری ملی تو وہ وہاں پہنچ کر ان سے ڈاکٹری صلاح و مشورہ لیا۔بعد میں ڈاکٹر دلشاد انور نے مریض کو اللپٹی واقع اپنی بون جوائنٹ اینڈ ٹراما کلینک ( گڈو ریسٹ ہاوس ) میں بلوا کر اسے پہلے ٹی بی کی دوا دی جب اس سے کوئی فائدہ نہیں ہوسکا تو اس کا اسپائن سرجری ٹرانسپیڈوکولر ڈیکمپریشن وتھ پیڈیکل اسکریو فیکیشن ڈاکٹر دلشاد انور نے کیا۔انہوں نے بتایا کہ آپریشن کے 4 ماہ بعد مختلف طریقہ علاج سے مریض اب دونوں پاوں پر کھڑا ہوکر چل رہا ہے۔ڈاکٹر دلشاد انور نے بتایا کہ حالانکہ اس طرح کا علاج بڑے شہروں میں کافی مہنگا ہوتا ہے لیکن معمولی خرچ پر جہانگیر کو نئی زندگی دیکر اس کی زندگی میں خوشیاں لائی گئی ہیں۔اس کی کامیاب سرجری اور علاج سے کلینک کے عملے اور جہانگیر کے اہل خانہ کافی خوش ہیں۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker