ہندوستان

ساکشی مہاراج کی زبان و فکر مفلوج، اویسی کے خلاف ہذیان گوئی

 

قنوج۔ ۱۶؍نومبر: ایودھیا معاملے پر سپریم کورٹ کے فیصلے پر بیان بازی کے بعدنقیب ِ ملت حیدرآباد کے ایم پی اسد الدین اویسی کی مخالفت کی جارہی ہے ۔ یوپی کے قنوج ضلع میں ایک پروگرام میں شرکت کرنے پہنچے بی جے پی رہنما ساکشی مہاراج نے نقیب ِ ملت پر سیاسی حملہ کیا ۔ ساکشی مہاراج نے کہا کہ’ اویسی مسلمانوں کے ٹھیکیدار نہیں ہیں، رام مندر پر فیصلے کے بعد اویسی جیسے لوگوں کی سیاسی زمین کھسک گئی ہے۔علاوہ ازیں ساکشی مہاراج نے نقیب ِ ملت اویسی کاموازنہ گندم کے کھیت میں لگنے والے ایک بیماری سے کر ڈالا۔ انہوں نے کہا کہ جیسے گندم کے کھیت میں مرض لگ جاتا ہے ویسے ہی اویسی معاشرے میں زہر گھولنے کا کام کر رہے ہیں۔حال ہی میں ساکشی مہاراج نے نقیب ِ ملت اسد الدین اویسی کی طرف سے دیئے گئے بیان کو لے کر کہا تھا کہ وہ غداری کی بات نہ کریں۔ساکشی مہاراج نے کہا کہ جب اویسی نے پہلے کہا کہ سپریم کورٹ کا جو بھی فیصلہ (ایودھیا پر) ہوگا، اسے قبول کیا جائے گا. تو اب وہ کیوں اس کی مخالفت کررہے ہیں ۔ساکشی مہاراج نے کانگریس پر بھی حملہ بولا۔ ساکشی نے کہا کہ کانگریس 70 سال تک رام مندر پر سیاسی کرتی رہی۔ آبادی کنٹرول قانون پر ساکشی مہاراج نے کہا کہ 150 ممبران پارلیامنٹ نے قانون بنانے کے لئے خط لکھا ہے. ہندو، مسلم، سکھ، عیسائی تمام مذاہب کے لوگوں کو آگے آکر اس قانون کو بنانے کا مطالبہ کرنا چاہئے۔صدر مجلس نقیب ِ ملت اسد الدین اویسی نے کہا تھا کہ :’میں کورٹ کے فیصلے سے مطمئن نہیں ہوں۔ نقیب ِ ملت نے کہا تھا کہ ہم اپنے حق کے لئے لڑ رہے ہیں، ہمیں خیرات کے پانچ ایکڑ زمین نہیں چاہئے۔ ہمیں اس پانچ ایکڑ زمین کی تجویز کو مسترد کرتے ہیں ۔ہم پر احسان کرنے کی ضرورت نہیں ہے۔ نقیب ِ ملت نے آگے کہا کہ اگر مسجد وہاں پر رہتی تو سپریم کورٹ کیا فیصلہ لیتا، یہ قانون کے خلاف ہے۔ بابری مسجد نہیں گرتی تو فیصلہ کیا آتا۔

Sajid Qasmi

غفران ساجد قاسمی تعلیمی لیاقت : فاضل دارالعلوم دیوبند بانی چیف ایڈیٹر بصیرت آن لائن بانی چیف ایڈیٹر ہفت روزہ ملی بصیرت ممبئی بانی و صدر رابطہ صحافت اسلامی ہند بانی و صدر بصیرت فاؤنڈیشن

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker