ہندوستان

ایمنسٹی انٹرنیشنل کے ٹھکانوں پر چھاپے، قانون کی خلاف ورزی کے ملے ثبوت : سی بی آئی

 

بنگلور۔ ۱۶؍نومبر: بین الاقوامی سطح پر انسانی حقوق کے لئے کام کرنے والی تنظیم ایمنسٹی کے بنگلور اور دہلی واقع دفاتر پر سی بی آئی نے چھاپہ مارا ہے۔ایمنسٹی انٹرنیشنل گروپ پر قوانین کی خلاف ورزی کرتے ہوئے غیر ملکی فنڈنگ حاصل کرنے کا الزام ہے. چھاپہ ماری کے بعد سی بی آئی نے کہا ہے کہ برآمد کیے دستاویزات کی اب تک کی تحقیقات سے واضح ہے کہ تنظیم کچھ ایسی سرگرمیوں میں ملوث ہے جو قانونی طور پر غلط ہیں۔سی بی آئی کے ذرائع نے چھاپہ ماری کے بارے میں بتایا کہ :’ایمنسٹی انٹرنیشنل کے اکاؤنٹس اور دستاویزات کی جانچ سے پتہ چلا ہے کہ کمپنی کسی طرح کے منافع کمانے کے کام میں نہیں تھی، لیکن کچھ ایسے کام کئے جا رہے تھے جو ایف سی آر اے کے قوانین کی خلاف ورزی ہے۔ ایمنسٹی انٹرنیشنل گروپ پر قوانین کی خلاف ورزی کرتے ہوئے غیر ملکی فنڈنگ حاصل کرنے کا الزام ہے. ایمنسٹی انٹرنیشنل انڈیا کے ایک افسر نے نام ظاہر نہ کرنے کی شرط پر بتایا کہ ادارے کے بنگلور واقع دفتر میں سی بی آئی کی 6 لوگوں کی ٹیم صبح ساڑھے 8 بجے پہنچی اور یہ چھاپہ ماری شام 5 بجے تک جاری رہی۔ایمنسٹی نے ایک بیان جاری کرکے کہا ہے کہ :’گزشتہ کچھ سالوں سے جب بھی ایمنسٹی انڈیا ہندوستان میں انسانی حقوق کی خلاف ورزی کے خلاف بولتا ہے تو اسے پریشان کیا جاتا ہے۔ تنظیم نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ وہ بھارتی اور بین الاقوامی قوانین کی پیروی کرتی ہے ۔

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker