ہندوستان

پڑوسی ممالک کے متاثرین کو ہندوستانی شہریت دینے سے بہتر مستقبل یقینی ہوگا، ایودھیا فیصلے کے بعد خدشات غلط ثابت ہوئے، ماضی کی وراثت اہم، بہتر کل کے لئے فیصلہ ضروری، مودی نے کہا، طلاق قانون اور دفعہ 370 پر فیصلے سے نئے امکانات روشن، ہم نیا باب لکھ رہے ہیں

 

نئی دہلی۔۶؍دسمبر: وزیر اعظم نریندر مودی نے متنازعہ شہریت ترمیمی بل کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہاہے کہ پڑوسی ممالک میں ظلم و ستم کے شکار افراد کو بھارتی شہریت دینے سے بہتر کل یقینی ہو گا۔ایچ ٹی لیڈرشپ کانفرنس میں شہریت ترمیمی بل کے تناظر میں ، وزیر اعظم مودی نے کہا ہے کہ ہمسایہ ممالک کے سیکڑوں خاندانوں کو ، جنہوں نے ہندوستان پر یقین کیا جب ان کی شہریت کا راستہ کھولاجائے گا تو وہ ان کے بہتر مستقبل کو یقینی بنائیں گے۔مرکزی کابینہ نے بدھ کے روز شہریت ترمیمی بل کی منظوری دے دی۔ تاہم ،مذہبی امتیازات برتنے والے اس بل کی حزب اختلاف کی بہت سی جماعتیں مخالفت کر رہی ہیں اوراسے غیرآئینی بتارہی ہیں۔ اس بل میں پاکستان ، بنگلہ دیش اور افغانستان سے آنے والے مہاجرین کی حیثیت سے غیر مسلموں کو شہریت دینے کی سہولت دی گئی ہے۔ توقع کی جارہی ہے کہ پارلیمنٹ کے جاری اجلاس میں پیرکولوک سبھا میں پیش کیا جائے گا۔جس میں نام نہادسیکولرپارٹیوں کے سیکولرزم اورآئین کے تئیں ان کی وفاداری کاامتحان بھی ہوگا۔انہوں نے کہاہے کہ ہمیں یاد رکھنا ہوگا کہ رام جنم بھومی کے فیصلے سے پہلے ، کن کن شکوک و شبہات کا اظہار کیا جارہا تھا۔ صبح فیصلہ آیا اور شام تک ، عوام نے تمام خدشات کو غلط ثابت کردیا۔ اس کے پیچھے کل کی بہترقیمت تھی۔وزیر اعظم نے کہا کہ آرٹیکل 370 کو ہٹانے کا فیصلہ سیاسی طور پر مشکل لگتا ہے لیکن اس نے جموں و کشمیر اور لداخ کی ترقی کی نئی امیدوں کو جنم دیا ہے۔انہوں نے کہا کہ مسلم بہنوں کو ٹرپل طلاق سے نجات دلانے کے ساتھ ہی ملک کے لاکھوں خاندانوں کا کل بہتر ہو گیا۔ انہوں نے کہا کہ دہلی کی غیر منظورشدہ کالونیوں سے متعلق فیصلے سے یہاں کے 40 لاکھ افراد کے بہتر مستقبل کی راہ ہموار ہوگئی ہے۔مودی نے کہاہے کہ بہت سے فیصلے ایسے ہیں جو ماضی کی میراث ہیں لیکن نئے ہندوستان کی خاطر ان سے گریز نہیں کیا جاسکتا ہے۔انہوں نے کہا کہ ملک کے بہتر مستقبل کے لیے آج وقت کی ضرورت ہے کہ حکومت کو اہم علاقے (بنیادی علاقہ) میں گڈ گورننس پر کام کرنا چاہیے۔ لوگوں کی زندگی میں حکومت جتنی مداخلت کرے گی اور گڈگورننس جتنا زیادہ ہوگا ملک اتنی تیزی سے آگے بڑھے گا۔وزیر اعظم نے کہا کہ آج ہندوستان اعتماد سے اپنی معیشت کو 5 ٹریلین ڈالر کی معیشت بنانے کے لیے کوشاں ہے۔ یہ مقصد معیشت کے ساتھ ساتھ 130 کروڑ ہندوستانیوں کی اوسط آمدنی ، ان کی زندگی میں آسانی اور ان کے بہتر کل سے منسلک ہے۔مودی نے کہاہے کہ ہم تاریخ چھوڑنے والے نہیں ، ہم ایک نیا باب لکھنے جارہے ہیں۔ بہت سارے فیصلے ہیں ، جو ماضی کی میراث ہیں ، لیکن ایک نئے ہندوستان کے لیے ، ان سے بہتر کل کوچھوڑا نہیں کیا جاسکتا۔انہوں نے کہاہے کہ ہم ایسے لوگ ہیں جوملک کی طاقت ،وسائل اور ملک کے خوابوں پر اعتماد کرتے ہیں اور ملک میں دستیاب ہر وسائل کے بہترمستقبل کے لیے استعمال کرنے کی کوشش کر رہے ہیں۔

Sajid Qasmi

غفران ساجد قاسمی تعلیمی لیاقت : فاضل دارالعلوم دیوبند بانی چیف ایڈیٹر بصیرت آن لائن بانی چیف ایڈیٹر ہفت روزہ ملی بصیرت ممبئی بانی و صدر رابطہ صحافت اسلامی ہند بانی و صدر بصیرت فاؤنڈیشن

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker