مسلم دنیا

سعودی عرب:تمباکو نوشی کی خلاف ورزی پر 5 ہزار ریال جرمانہ

آن لائن نیوزڈیسک
سعودی عرب میں انسداد تمباکو نوشی کے نئے قانون کے لائحہ عمل کی خلاف ورزی پر 5 ہزار ریال تک جرمانہ ہوگا۔سعودی کابینہ کی جانب سے قانون کی منظوری کے بعد وزیر صحت ڈاکٹر توفیق الربیعہ نے لائحہ عمل کی منظوری دے دی۔سعودی اخبارکے مطابق وزارت صحت کے ذرائع نے بتایا ہے کہ نئے قانون کی دفعہ 4کے مطابق سعودی کابینہ نے تمباکو اور اس سے تیار کی جانے والی اشیائپرٹیکس بڑھا دیا ہے۔انسداد تمباکو نوشی قانون کے بموجب دکاندار کو اس بات کا حق ہے کہ اگر کوئی اس سے سگریٹ خریدنے کے لیے آئے تو وہ خریدار سے 18برس کا ہونے کا سرٹیفکیٹ یا ثبوت طلب کرسکتا ہے کیونکہ 18برس سے کم عمر کے لڑکوں اورلڑکیوں کو سگریٹ فروخت کرنے کی اجازت نہیں۔وزارت صحت کا کہنا ہے کہ جو شخص بھی ممنوعہ مقامات پر سگریٹ نوشی کرے گا اس پر 200 ریال جرمانہ ہوگا۔انسداد تمباکو نوشی کے نئے قانون کی دفعہ 10میں بتایا گیا ہے کہ تمباکو نوشی کے قانون کی ایسی کسی بھی دفعہ کی خلاف ورزی پر جس کی سزا کا باقاعدہ تذکرہ نہ ہو پانچ ہزار ریال تک جرمانہ ہوگا اور ایک سے زیادہ بار خلاف ورزی پر جرمانہ دگنا کردیا جائے گا۔انسداد تمباکو نوشی قانون کیمطابق مساجد اس کے اطراف کا صحن، مسجد الحرام، مکہ مکرمہ، مسجد نبوی شریف مدینہ منورہ، سکول، کالج، یونیورسٹیاں، تعلیمی و تربیتی ادارے، سعودی سفارتخانوں اور قونصل خانوں کے ماتحت تعلیمی ادارے، نجی، فلاحی و سماجی ادارے و انجمنیں ایسے مقامات ہیں جہاں سگریٹ اور تمباکو نوشی ممنوع ہے۔تاریخی مقامات، عجائب گھر، شادی گھر، کانفرنس ہال، سیمینارز، کانفرنس ہال، بسیں، گاڑیاں، ٹرینیں، سمندری جہاز، ہوائی جہاز، کشتیاں، بس اسٹیشن، ریلوے اسٹیشن اور ہوائی اڈے بھی ممنوعہ مقامات کی فہرست میں شامل ہیں۔

Tags
Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker