ہندوستان

دہلی اسمبلی انتخابات 2020: بی جے پی کے 57 امیدواروں میں نہیں ہے کوئی وزیر اعلیٰ کے عہدے کا چہرہ؟

نئی دہلی:18 ؍جنوری(بی این ایس )
دہلی کی 70 اسمبلی انتخابات کے لئے بھارتیہ جنتا پارٹی نے امیدوار طے کر دیئے ہیں۔پارٹی نے اسمبلی کی 70 سیٹوں میں سے فی الحال 57 سیٹوںکے لئے امیدواروں کے ناموں کا اعلان کر دیا ہے۔بی جے پی نے زیادہ اعتماد اپنے پرانے سپہ سالاروں پر ہی جتایا ہے۔جبکہ دہلی کی سب سے مشہور نئی دہلی اسمبلی سیٹ کے نام کا اعلان نہیں کیا گیا ہے۔لیکن ان 57 ناموں میں ایک بھی نام ایسا نہیں لگ رہا ہے جسے وزیر اعلی کے عہدے کا دعویدار سمجھا جا سکے۔ان ناموں کا اعلان جمعہ کو دہلی الیکشن انچارج پرکاش جاوڈیکر کے ساتھ ریاستی صدر منوج تیواری نے کیا ہے۔ان میں 11 امیدوار ایس سی /ایس ٹی سے ہیں جبکہ چار خواتین کوبھی ٹکٹ دیا گیا۔یہی نہیں عام آدمی پارٹی میں رہے کپل مشرا اور کانگریس میں رہے سریندر سنگھ بٹو جیسے دل بدلو کے نام بھی فہرست میں ہیں۔حالانکہ بی جے پی نے ابھی تک اروند کیجریوال کی سیٹ نئی دہلی اور کرشنا نگر سے کسی بھی امیدوار کو نہیں اتارا ہے۔کرشنا نگر کی سیٹ سے کبھی مرکزی وزیر ہرش وردھن کا گڑھ رہا ہے۔لیکن سال 2015 میں بی جے پی کی وزیر اعلی کے عہدے کی امیدوار کرن بیدی الیکشن ہار گئی تھیں۔ہو سکتا ہے بی جے پی ان دو سیٹوںپر بڑے چہروں کو میدان میں اتارے۔بات کریں نئی دہلی سیٹ کی تو یہ علاقہ وزیر اعلی اروند کیجریوال کا سیاسی قسمت کا فیصلہ کرنے والا ہے۔ سال 2013 میں کیجریوال نے یہاں پر وجیندر گپتا اور شیلا دیکشت کو شکست دی تھی۔اس کے بعد سال 2015 کے اسمبلی انتخابات میں اروند کیجریوال نے بی جے پی کی ترجمان نوپور شرما کو شکست دی تھی۔بات کریں کرشنا نگر سیٹ کی تو ہرش وردھن اس سیٹ سے 5 بارممبر اسمبلی رہے ہیں۔سال 2013 میں ہوئے انتخابات میں وہ بی جے پی کے وزیر اعلی کے عہدے کے امیدوار بھی تھے۔سال 2015 کے انتخابات میں بی جے پی کی جانب سے وزیر اعلی کے عہدے کی امیدوار رہیں کرن بیدی یہاں سے الیکشن ہار گئی تھیں۔ان کوعام آدمی پارٹی کی لیڈر ایس کے بگا نے شکست دی تھی۔

Tags

Sajid Qasmi

غفران ساجد قاسمی تعلیمی لیاقت : فاضل دارالعلوم دیوبند بانی چیف ایڈیٹر بصیرت آن لائن بانی چیف ایڈیٹر ہفت روزہ ملی بصیرت ممبئی بانی و صدر رابطہ صحافت اسلامی ہند بانی و صدر بصیرت فاؤنڈیشن

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker