ہندوستان

بہار میں سیاست ہوئی دلچسپ، لالو یادو کے سمدھی چندرکا رائے نے کہا وہ جے ڈی یو میں جانا چاہتے ہیں

پٹنہ:13فروری (بی این ایس )
بہار اسمبلی انتخابات سے پہلے صوبے کی سیاست دلچسپ ہو گئی ہے۔جس نتیش کمار کو اقتدار سے باہر کرنے کے لئے آر جے ڈی ایڑی چوٹی کا زور لگا رہی ہے، اسی نتیش کمار کا جادو آر جے ڈی رہنماؤں کے سر چڑھ کر بول رہا ہے۔اب لالو یادو کے سمدھی اور آر جے ڈی ممبر اسمبلی چندرکا رائے نے اعلان کیا کہ وہ جے ڈی یو میں جانا چاہتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ وہ نتیش کمار کے کام سے متاثر ہیں۔آر جے ڈی نے چندرکا رائے پر ڈسپلن شکنی کا الزام لگایا ہے۔چندرکا رائے نے آج اعلان کیا کہ وہ جے ڈی یو میں جانا چاہتے ہیں۔جب ان سے یہ پوچھا گیا کہ جے ڈی یو ہی کیوں؟ اس پر چندرکا رائے نے صاف کہا کہ وہ بہار کے وزیر اعلی نتیش کمار کے کام سے متاثر ہیں۔اس کے ساتھ ہی چندرکا رائے نے دعوی کیا کہ پارٹی میں بہت سے ممبر اسمبلی ناراض ہیں۔
لالو یادو کے سمدھی نے کہا کہ وہ نتیش کمار کے کام سے اس کے بعد سے متاثر ہے جب سے وہ اپوزیشن میں تھے۔انہوں نے کہا کہ وزیر اعلی نتیش نے بہار کو بہت آگے بڑھایا ہے،بہار میں ہی نہیں ملک میں ان کا نام ہے۔اپنے داماد تیج پرتاپ یادو کا نام لئے بغیر انہوں نے کہا کہ لوک سبھا انتخابات میں چھپرا سیٹ سے شکست دینے کے لئے کیا کیا نہیں کیا گیا۔چندرکا رائے نے کہا کہ تیجسوی یادو پر سوال اٹھائے گئے۔تیجسوی پر نشانہ لگاتے ہوئے کہا گیا کہ وہ ٹھیک سے دو پروگرام کرنے میں تھک جاتے ہیں۔اس کے باوجود بھی کوئی کارروائی تو دور، وجہ بتاو نوٹس بھی نہیں دیا گیا۔بتا دیں کہ گزشتہ لوک سبھا انتخابات میں تیج پرتاپ نے آر جے ڈی امیدواروں کے خلاف اپنے لالو رابڑی مورچہ کے امیدوار اتار دئے تھے۔اتنا ہی نہیں چھپرا لوک سبھا سیٹ سے آر جے ڈی کے امیدوار چندرکا رائے کو ووٹ نہ دینے کی بھی اپیل کی تھی۔
غور طلب ہے کہ چندرکا رائے کی بیٹی ایشوریا رائے کی شادی لالو یادو کے بڑے بیٹے تیج پرتاپ یادو سے ہوئی تھی لیکن دونوں کے درمیان طلاق کا معاملہ عدالت میں چل رہا ہے۔ایشوریا نے تشدد کا مقدمہ رابڑی دیوی پر بھی کر رکھا ہے۔چندرکا رائے بہار کے سابق وزیر اعلی داروغہ رائے کے بیٹے ہیں۔

Tags

Sajid Qasmi

غفران ساجد قاسمی تعلیمی لیاقت : فاضل دارالعلوم دیوبند بانی چیف ایڈیٹر بصیرت آن لائن بانی چیف ایڈیٹر ہفت روزہ ملی بصیرت ممبئی بانی و صدر رابطہ صحافت اسلامی ہند بانی و صدر بصیرت فاؤنڈیشن

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker