ہندوستان

کجریوال نے تیسری بار لیاوزیر اعلیٰ کے عہدے کا حلف، دہلی کو آگے بڑھانے کے لئے پی ایم کا آشیرواد چاہتا ہوں: کجریوال

نئی دہلی :16 فروری ( بی این ایس )
اروند کجریوال نے اتوار کو تیسری بار دہلی کے وزیر اعلی کے عہدے کا حلف لیا۔ ان کے بعد منیش سسودیا، ستیندر جین، گوپال رائے، کیلاش گہلوت، عمران حسین اور راجندر پال گوتم نے وزیر کے عہدے کا حلف لیا۔ کانگریس کی شیلا دکشت کے بعد کجریوال تیسری بار وزیر اعلی کے عہدے کا حلف لینے والے دوسرے لیڈر ہیں۔ انہوں نے کہا کہ میں سب کا وزیر اعلیٰ ہوں، کوئی بھی کام ہو تو براہ راست میرے پاس آئیں۔ دہلی کو آگے بڑھانے کے لئے وزیر اعظم کا آشیروادچاہتا ہوں۔عام آدمی پارٹی نے حلف کی تقریب میں وزیر اعظم نریندر مودی کے علاوہ کسی دیگر رہنما کو دعوت نہیں دی۔ اگرچہ، بنارس دورے کے باعث مودی اس میں شامل نہیں ہو پائے۔ کجریوال نے اپنی تقریر میں اس کا ذکر بھی کیا۔ آپ نے دہلی کی ترقی میں شراکت دینے والی 50 لوگوں تقریب میں خصوصی مہمان کے طور پر بلایا۔حلف لینے کے بعد کجریوال نے کہا کہ آج آپ کے بیٹے نے تیسری بار وزیر اعلیٰ کے عہدے کا حلف لیا ہے، یہ میری نہیں آپ لوگوں کی جیت ہے۔ ہر دلی والوںکی جیت ہے، ہر ماں بہن کی جیت ہے۔ گزشتہ 5 سالوں میں ہماری کوشش رہی ہے کہ دہلی کے ہر خاندان کی زندگی میں خوشحالی لا سکیں۔ دہلی کا تیزی کے ساتھ ترقی ہو اور اگلے 5 سال بھی یہی کوشش جاری رہے گی۔ انتخابات میں کچھ لوگوں نے آپ، بی جے پی اور کانگریس کو ووٹ دیا، لیکن میں نے آج حلف اٹھا لیا ہے تومیں سب کا وزیر اعلی ہوں۔ میں بی جے پی اور کانگریس والوں کا بھی سی ایم ہوں۔ 5 سال میں کبھی کسی کے ساتھ سوتیلا سلوک نہیں کیا۔ دہلی کے دو کروڑ خاندانوں سے کہنا چاہتا ہوں کہ انتخابات اب ختم ہوا، تمام 2 کروڑ لوگ میرے خاندان کا حصہ ہیں، بغیر کسی ہچکچاہٹ میرے پاس آ ئیں، سب کا کام کروں گا، چاہے کسی بھی مذہب یا ذات کے ہوں ۔ میں سب کے ساتھ مل کر کام کرنا چاہتا ہوں۔ انتخابات میں مخالفین نے جو کچھ کہا میں نے سب کو معاف کر دیا ہے، جو اتھل پتھل ہوئی سب بھول جائیں، مرکز کے ساتھ مل کر کام کریں گے۔وزیر اعظم کو بھی حلف برداری کی دعوت بھیجا تھا، وہ شاید مصروف ہیں، اس لیے وہ آ نہیں پائے۔ دہلی کو آنے بڑھانے کے لئے وزیر اعظم کا بھی آشیرواد چاہتا ہوں۔کجریوال نے کہا کہ ملک بھر سے خبر آرہی ہے کہ کئی ریاستی حکومتوں نے دہلی کے ماڈل پر بجلی مفت کر دی، محلہ کلینک شروع کر دیا ۔ کون کہتا ہے کہ سرکاری اسکول ٹھیک نہیں ہو سکتے،دہلی کو دیکھیں۔ آج مجھے خوشی ہے کہ میرے ساتھ یہاں دہلی کے معمار موجود ہیں۔دہلی اسمبلی انتخابات کے لئے 8 فروری کو ووٹ ڈالے گئے تھے۔ 11 فروری کو آئے نتائج میں عام آدمی پارٹی نے 70 میں سے 62 سیٹیں جیت کر اقتدار کو تیسری بار اپنی جھولی میں کرلیا ۔ وہیں بی جے پی کو 8 سیٹیں ملیں، گزشتہ انتخابات کے مقابلے اس 5 سیٹوں کا فائدہ ہوا ہے۔ کانگریس 2015 کی طرح اس بار بھی اکاؤنٹ نہیں کھول سکی ۔

Tags
Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker