Baseerat Online News Portal
Browsing Category

صدائے دل

رواداری یا دین اکبری کی تجدید! غلام مصطفی عدیل قاسمی

خوف و ہراس کے سائے تلے زندگی کا گزران کر رہے ہندی مسلمانوں کے رہنما حاشا و کلا دین اکبری کی تجدید کرتے و کرواتے دکھائی دے رہے ہیں، کانوڑ یاترا و امرناتھ یاترا وغیرہ کے موقع پر بعض تنظیمیں یکجہتی کے نام پر درحقیقت دین اسلام کی بیخ کنی کر رہی…
مزید پڑھیں ....

دھیان رکھیں کہیں زکوٰۃ و صدقات اکارت اور بیکار نہ ہو

غلام مصطفی عدیل فاضل دارالعلوم دیوبند دین کی ترویج و اشاعت کے لئے جھلسا دینے والی گرمی میں سفراء مدارس بھوکے پیاسے در در کی ٹھوکریں اور راہ راہ کی خاک چھاننے پر مجبور ہیں کہ نظر پڑتی ہے تو کلیجہ منہ کو آنے لگتا ہے (خدا ان کی قربانی قبول…
مزید پڑھیں ....

دارالعلوم دیوبند کا چمکتا و دمکتا ستارہ

غلام مصطفی عدیل فاضل دارالعلوم دیوبند آج جب آسام ودھان سبھا میں اسپیکر کی کرسی پر ڈاکٹر رفیق الاسلام قاسمی کو دیکھا تو جہاں خوشی کا ٹھکانہ نہیں رہا وہیں یکلخت دل نے یہ صدا دی کہ "ذرا نم ہو تو یہ مٹی بڑی زرخیز ہے ساقی" میرا خیال ہے اب…
مزید پڑھیں ....

اکابر دارالعلوم دیوبند کے سچے جانشین، عاشق رسول مولانا عبد الخالق مدراسی

از: غلام مصطفی عدیل فاضل دارالعلوم دیوبند دارالعلوم دیوبند کے نائب مہتمم، عاشق رسول مولانا عبد الخالق مدراسی دہلی ریلوے اسٹیشن پر ٹرین کا انتظار کر رہے ہیں۔ استاذ محترم کی خدمات دارالعلوم دیوبند میں پچاس سالوں پر محیط ہیں۔ ان پچاس…
مزید پڑھیں ....

حیراں ہوں دل کو روؤں کہ پِیٹوں جِگر کو میں

غلام مصطفی عدیل قاسمی شریعت مطہرہ کے خلاف عدالت سے اس طرح کا فیصلہ کوئی پہلی بار نہیں ہوا ہے۔ یاد کیجیے 27/سمتبر 2018 اسماعیل فاروقی کے کیس کو اس میں بھی عدالت عظمیٰ نے بعینہ یہی بات کہی تھی کہ " مساجد اسلام کا لازمی حصہ نہیں ہیں"…
مزید پڑھیں ....

پٹنہ بال گرہ کی حسینہ اور مریم جیسی لڑکیوں کا ذمہ دار کون ہے!

پٹنہ بال گرہ کی حسینہ اور مریم جیسی لڑکیوں کا ذمہ دار کون ہے۔! مفتی غلام رسول قاسمی گزشتہ روز ایک ویڈیو دیکھا جس میں گڑیا نامی متاثرہ لڑکی دعویٰ کر رہی ہے کہ شہر پٹنہ کے گائے گھاٹ پر واقع لڑکیوں کے یتیم خانے میں کم عمر لڑکیوں کو زبردستی…
مزید پڑھیں ....

زندگی موت کے دہانے پر

صدائے دل: حبیبہ علی خان فیچر ایڈیٹر بصیرت آن لائن زندگی کیا ہوتی ہے اور کہاں کہاں سے ہوتی ہوںٔی کہاں لے آتی ہے انسان کو، یہ ایک فلسفہ ہے، ایسا فلسفہ جس کی گرہوں کو کھولتے کھولتے اور اس کی گہرائیوں میں اترتے اترتے بالوں میں چاندی اور…
مزید پڑھیں ....